رام مندر کی تعمیر کیلئے 3000 اینٹیں لے کر ایودھیا پہنچے مسلم کارسیوک فورم کے کارکنان ، جے شری رام کا لگایا نعرہ

Apr 21, 2017 12:25 PM IST | Updated on: Apr 21, 2017 12:25 PM IST

فیض آباد : ایودھیا میں جمعرات کو لکھنؤ میں رام مندر کی تعمیر سے وابستہ متنازع پوسٹر لگانےکے ملزم اور مسلم کارسیوک فورم کے صدر اعظم خاں کی قیادت میں چند مسلما ن اپنے ساتھ رام مندر کی تعمیر کے لئے 3000 اینٹوں لے کر پہنچے۔ تاہم جب یہ لوگ رام للا کے نزدیک جانے لگے تو پولیس نے انہیں روک دیا۔یہ لوگ رام مندر کی تعمیر کیلئے بنائی گئی ایک تنظیم مسلم کارسیوک فورم کے اراکین تھے ، جو جمعرات کی شام چھ بجے ایودھیا پہنچے اور یہاں رام مندر کی تعمیر کا اعلان کرتے ہوئے جے شری رام کے نعرے لگانے لگے ۔

فورم کے صدر اعظم خان کا کہنا تھا کہ ان کا مقصد رام مندر کی تعمیر ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ لوگ مندر کی تعمیر میں اپنا تعاون اینٹوں کے ذریعے دینا چاہتے ہیں۔ لیکن مندر بند بتا کر انہیں روک دیا گیا ہے۔کوتوال اروند کمار پانڈے نے بتایا کہ مسلم فورم کے رکن بستی، مہاراج گنج، گورکھپور، لکھنؤ وغیرہ سے آئے تھے۔

رام مندر کی تعمیر کیلئے 3000 اینٹیں لے کر ایودھیا پہنچے مسلم کارسیوک فورم کے کارکنان ، جے شری رام کا لگایا نعرہ

خیال رہے یہ وہی اعظم خاں ہے ، جس کو گزشتہ دنوں راجدھانی لکھنؤ میں ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر سے وابستہ متنازع پوسٹر لگانے اور ایس ایس پی منزل سینی سے بدسکولی کرنے کے الزام میں حراست میں لیا گیا تھا۔ اعظم خان کا دعوی ہے کہ وہ لکھنؤ میں بی جے پی لیڈر ہیں اور مسلمانوں کی نمائندگی کرتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز