ہندو۔ مسلم لڑکے لڑکیوں کے درمیان راکھی باندھنے کی مہم چلائے گا مسلم راشٹریہ منچ

دہرہ دون۔ آئندہ تین اگست سے آرایس ایس کی مسلم ونگ یعنی مسلم راشٹریہ منچ ملک بھر میں راکھی مہم شروع کرنے جا رہا ہے ۔

Aug 01, 2017 07:45 PM IST | Updated on: Aug 01, 2017 07:45 PM IST

دہرہ دون۔ آئندہ تین اگست سے آرایس ایس کی مسلم ونگ یعنی مسلم راشٹریہ منچ ملک بھر میں راکھی مہم شروع کرنے جا رہا ہے ۔ اس مہم کے تحت مسلم لڑكياں ہندو لڑکوں کو اور ہندو لڑكياں مسلم لڑکوں کو راکھی باندھیں گی ۔ اس مہم کا آغاز اگرچہ تین اگست کو جے پور سے ہوگا مگر اتراکھنڈ کے دارالحکومت دہرادون میں اس پر سیاست گرم ہو گئی ہے ۔

 ناگپورسے مسلم سیاست کو لیکرایک نئی مہم شروع ہونے جا رہی ہے۔ اس بار موقع چنا گیا ہے بھائی بہن کے مقدس تہوار رکشا بندھن کو  ۔ دراصل آر ایس ایس کے مسلم ونگ نے تین اگست سے راکھی مہم کے آغاز کا اعلان کیا ہے ۔ راجستھان کے جے پور سے باقاعدہ مسلم راشٹریہ منچ ملک بھر میں اس مہم کی منصوبہ بندی کریگا ۔ اس کے بعد پانچ اگست کو دہلی میں اور چھ اگست کو لکھنؤ میں اس کا انعقاد کیا جائے گا ۔ اس مہم کے تحت مسلم بہنیں ہندو بھائیوں کو اور ہندو بہنیں مسلم بھائیوں کو راکھی باندھ کر گنگا جمنی تہذیب کے ساتھ ساتھ ایک دوسرے کی حفاظت کا وعدہ بھی کریں گی ۔ اتراکھنڈ میں بھی اس مہم کو زورشور سے شروع کرنے کی تیاری ہے ۔ دہرادون میں تنظیم کے عہدیدار بتاتے ہیں کہ اس مہم کے ذریعے ہندو۔ مسلم اتحاد کو مضبوطی ملے گی۔

ہندو۔ مسلم لڑکے لڑکیوں کے درمیان راکھی باندھنے کی مہم چلائے گا مسلم راشٹریہ منچ

 تین اگست سے شروع ہونے والی اس راکھی مہم کو مہینے بھر ملک بھر میں منعقد کیا جائیگا، جس میں بڑی تعداد میں ہندو مسلم نوجوانوں کو اس مہم سے جوڑنے کا منصوبہ ہے۔  آر ایس ایس کے اس قدم کو دہرادون میں جمعیت علمائے ہند کے لیڈر محض سیاسی پینترابازی بتا کر اپنی  ناراضگی بھی ظاہر کی ہے۔ اتراكھنڈ مسلم راشٹریہ منچ  بھی دہرادون سمیت مختلف اضلاع میں راکھی مہم کے آغاز کی تیاریوں میں لگ گیا ہے ۔ مگر جس طرح سے دہرادون کے  مسلم سماج میں اس کو لے کر ابھی سے ناراضگی نظر آرہی ہے اس سے رکشا بندھن کے بہانے سیاست تیز ہونے کے پورے آثار ہیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز