دہلی کے جامعہ نگر علاقہ میں مسلم خواتین نے سنبھالی صفائی کی کمان

Jan 03, 2017 07:15 PM IST | Updated on: Jan 03, 2017 07:15 PM IST

نئی دہلی۔  وزیر اعظم نریندر مودی کے’’ سوچھ بھارت مشن‘‘ سے نکلی تبدیلی کی لہر دہلی کے مسلم اکثریتی جامعہ نگر علاقے میں بہنے لگی ہے اور اس مہم کی کمان خواتین نے سنبھال رکھی ہے۔ دراصل اس رہائشی علاقے کے لوگ بستی کے درمیان ہی کوڑا پھینکے جانے کے مسئلے سے پریشان تھے۔ جامعہ نگر کے غفار منزل علاقے کےریزیڈینٹ ویلفیئر ایسوسی ایشن میں مردوں کا غلبہ ہے اور انہوں نے کوڑے کے مسئلے سے نجات کے لئے کوئی کوشش نہیں کی۔ گندگی اور بدبو سے نجات حاصل کرنے کے لئے کمانڈ آخر کار علاقے کی عورتوں نے سنبھالی۔ انہوں نے صاف صفائی کے سلسلے میں لوگوں کو بیدار کیا اور علاقے میں کوڑا پھینکے جانے کی جگہ پر خوبصورت گملے لگا ديے۔

لیكن خواتین کی یہ پہل مردوں کے غلبہ والے اس علاقے کے کچھ لوگوں کو راس نہیں آئی۔ اس مہم کو ناکام کرنے کی انہوں نے بہت کوشش کی۔علاقے کو صاف ستھرا رکھنے کا عزم لینے والی ان خواتین نے ہار نہیں مانی۔ انہوں نے چندہ جمع کرکے جگہ -جگه دکانوں، اور ہوٹلوں کے سامنے کوڑے دان رکھے۔ کوڑا پھینکنے کی جگہ کوعلاقے کے درمیان سے ہٹا کر باہر کر دیا گیا جس سے مينسپلٹي ٹرک اسے آسانی سے اٹھانے لگا۔ ان خواتین نے غفار منزل کی ویمن ویلفیئر ایسوسی ایشن کا قیام کیا جسے مقامی کونسلر عشرت جہاں کا مکمل تعاون مل رہا ہے۔

دہلی کے جامعہ نگر علاقہ میں مسلم خواتین نے سنبھالی صفائی کی کمان

تهريما احمد، تسمين جمال اور ترنم عبداللہ نے بتایا کہ علاقے کی خواتین اب گندگی کے سامنے خاموش تماشائی بن کر نہیں رہ سکتیں۔ اس سے لوگوں کی صحت خراب ہو رہی تھی۔ تهريما نے کہا ’’ہم نے برسوں تک انتظار کیا کہ آر ٖڈبلیو اےصاف صفائی کے لئے پہل کریں ،ہمیں مجبوراً گھر کی چہار دیواری سے باہر نکلنا پڑا۔ اب خواتین میں بیداری آ رہی ہے۔ یہ افسوسناک ہے کہ کچھ لوگ تبدیلی نہیں کرنا چاہتے لیکن اب خواتین نے تبدیلی کی کمان سنبھال لی ہے اور وہ پیچھے ہٹنے والی نہیں ہیں۔‘‘

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز