اترپردیش : 25 ہزار روپے کی چوری کا الزام لگاکر مسلم شوہر نے بیوی کو دی تین طلاق

Aug 28, 2017 11:48 PM IST | Updated on: Aug 28, 2017 11:48 PM IST

سیتاپور : اترپردیش کے سیتا پور میں ایک مسلم نوجوان کے ذریعہ اپنی بیوی کو 25 ہزار روپے کی چوری کا الزم لگاکرتین طلاق دئے جانے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ متاثرہ لڑکی کا دعوی ہے کہ اس نے اس سلسلہ میں پولیس میں شکایت درج کرائی ہے اور شوہر کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ اس کے پاس ابھی تک اس طرح کی کوئی شکایت درج نہیں کرائی گئی اور جیسے ہی شکایت درج کرائی جائے گی ، اس معاملہ میں کارروائی کی جائے گی۔

اطلاعات کے مطابق تین طلاق کا یہ واقعہ لہرپور کوتوالی علاقہ میں پیش آیا ہے۔ یہاں کے گوريا پرهلادپور گاؤں کے رہنے والی پیارے کی صاحبزادی روبی بانو کی شادی تقریبا 9 ماہ قبل تمبور کے رہنے والے علیم کے ساتھ ہوئی تھی ۔ روبی کا کہنا ہے کہ اس کا شوہر اکثر و بیشتر جہیز کا مطالبہ کرتا تھا اور اس کو ہراساں کرتا تھا۔ جس کی وجہ سے وہ دو ماہ پہلے اپنے میکے چلی آئی تھی۔

اترپردیش : 25 ہزار روپے کی چوری کا الزام لگاکر مسلم شوہر نے بیوی کو دی تین طلاق

روبی کے مطابق گزشتہ 24 جولائی کو علیم اپنے بھائی کلیم کے ساتھ اس کے گھر آیا اور 25 ہزار روپے کی چوری کا الزام لگاتے ہوئے پہلے تو اس کے ساتھ مار پیٹ کی اور پھر تین طلاق دے کر وہاں سے چلا گیا۔

معاملہ میڈیا میں آنے کے بعد اس سلسلہ میں جب سی او لهرپور اکھنڈ پرتاپ سنگھ سے بات کی گئی تو انہوں نے بتایا کہ اس سلسلہ میں انہیں ابھی تک کوئی شکایت نہیں ملی ہے۔ تاہم آج پیس کمیٹی کی میٹنگ میں اس گاؤں کے خاتون پردھان سے اس بابت معلومات ضرور ملی ہیں ۔ پولیس نے شکایت ملنے کے بعد کارروائی کی یقین دہانی کرائی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز