مدرسوں کو اصل دھارے کے تعلیمی نظام سے جوڑ دیا گیا ہے: مختار عباس نقوی

نئی دہلی۔ اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے آج کہا کہ گزشتہ ماہ میں مدرسوں میں ٹیچر،ٹفن اور ٹائلٹ کی سہولت مہیا کر کےانہیں اصل دھارے کے تعلیمی نظام سے جوڑدیا گیا ہے۔

Jan 13, 2018 08:53 PM IST | Updated on: Jan 13, 2018 08:53 PM IST

نئی دہلی۔ اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے آج کہا کہ گزشتہ ماہ میں مدرسوں میں ٹیچر،ٹفن اور ٹائلٹ کی سہولت مہیا کر کےانہیں اصل دھارے کے تعلیمی نظام سے جوڑدیا گیا ہے۔ مسٹر نقوی نے یہاں اقلیتی معائنہ حکام ورکشاپ کا افتتاح کرنے کے بعد اپنے خطاب میں کہا کہ گزشتہ تقریباً چھ ماہ میں مدرسوں سمیت ہزاروں اقلیتی تعلیمی اداروں میں یہ سہولیات مہیا کرا کے انہیں مرکزی دھارے کے تعلیمی نظام میں شامل کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ وزارت اپنے بجٹ کا 65فیصد سے زیادہ حصہ اقلیتوں کی تعلیم اور مہارت کی ترقی پر خرچ کررہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اقلیتی طبقے کے بچوں کو عالمی سطح کی جدید تعلیم مہیا کرانے کےلئے وزارت ملک بھر میں 5عالمی سطح کےتعلیمی اداروں کے ساتھ ساتھ نوودے کی طرز پر 100اسکول قائم کررہی ہے۔ اقلیتی طبقے کی لڑکیوں کی اعلی تعلیم کےلئے حوصلہ افزائی کرنے کے مقصد سے گریجوئشن کی پڑھائی پوری کرنے والی لڑکیوں کو 51ہزار روپے بطور ’شادی شگون ‘دینے کا منصوبہ شروع کیا گیا ہے۔

مدرسوں کو اصل دھارے کے تعلیمی نظام سے جوڑ دیا گیا ہے: مختار عباس نقوی

اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی: فائل فوٹو۔

Loading...

مسٹر نقوی نے کہا کہ ملک بھرکے 100اضلاع میں مہارت کے فروغ کے لئے ’غریب نواز کوشل وکاس کیندر ‘ قائم کئے جارہے ہیں، جہاں اقلیتی طبقے کے نوجوانوں کو روزگار رخی مہارت سے متعلق مختلف کورس کرائے جارہے ہیں۔ ان میں ’جی ایس ٹی فیسیلی ٹیٹر‘ اور ’سینیٹری سپروائزر‘کے کورس شامل ہیں جس سے بڑی تعداد میں نوجوانوں کو روزگار مل رہا ہے۔ وزارت کی مختلف اسکیموں پر عمل درآمد میں 280سے بھی زیادہ معائنہ حکام کا اہم رول بتاتے ہوئے مسٹر نقوی نے کہا کہ ان کی مدد سے صد فیصد نفاذ ممکن ہوسکا ہے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز