کشمیری قوم جنرل راوت کی بندوق سے دبنے والی نہیں : فاروق عبداللہ

فاروق عبداللہ اتوار کو یہاں شیر کشمیر کرکٹ اسٹیدیم میں اپنی جماعت کا پندرہ برس کے بعد منعقد ہونے والے ڈیلی گیٹس سیشن سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے متواتر مرکزی سرکاروں پر الزام لگایا کہ انہوں نے کشمیریوں کی محبت کو نہیں سمجھ

Oct 29, 2017 08:50 PM IST | Updated on: Oct 29, 2017 08:50 PM IST

سری نگر :  نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ کشمیری قوم فوجی سربراہ جنرل بپن راوت کی بندوق سے دبنے والی نہیں ہے۔ انہوں نے سوالیہ انداز میں کہا ’جنرل صاحب کتنے لاکھوں کو مارو گے۔ یہ قوم تمہاری بندوق سے دبنے والی نہیں ہے‘۔ فاروق عبداللہ اتوار کو یہاں شیر کشمیر کرکٹ اسٹیدیم میں اپنی جماعت کا پندرہ برس کے بعد منعقد ہونے والے ڈیلی گیٹس سیشن سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے متواتر مرکزی سرکاروں پر الزام لگایا کہ انہوں نے کشمیریوں کی محبت کو نہیں سمجھا۔

انہوں نے کہا کہ اگر مرکزی سرکاری لوگوں کے دل جیتنا چاہتی ہے تو اسے ریاست کو اس کی خودمختاری واپس کرنی ہوگی۔ تاہم فاروق عبداللہ نے کانگریس پر الزام لگایا کہ اسی جماعت نے ریاست کی خودمختاری چھینی ہے۔ نیشنل کانفرنس صدر نے فوجی سربراہ جنرل بپن راوت کے حالیہ بیان کہ ’مذاکرات کار کی تعیناتی سے کشمیر میں فوج کی کاروائیوں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا‘ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ’جنرل صاحب فرماتے ہیں کہ فوج اپنی کاروائی کرتی رہے گی۔ جنرل صاحب میری بات بھی سن لیجئے۔ کتنے لاکھوں کو مارو گے۔ یہ قوم تمہاری بندوق سے دبنے والی نہیں ہے۔ یہ بات مت سمجھنا کہ تم اپنی بندوقیں چلاکر ہمارے جذبات کو مجروح نہیں کرسکتے ہو۔ ہم آج بھی زندہ ہیں اور کل بھی زندہ رہیں گے۔ اور آپ کا مقابلہ کریں گے‘۔

کشمیری قوم جنرل راوت کی بندوق سے دبنے والی نہیں : فاروق عبداللہ

فاروق عبداللہ: فائل فوٹو

انہوں نے متواتر مرکزی سرکاروں پر الزام لگایا کہ انہوں نے کشمیریوں کی محبت کو نہیں سمجھا۔ انہوں نے کہا ’ہم تو محبت کے ساتھ آپ کے ساتھ جڑ گئے تھے۔ تم نے ہماری محبت کو سمجھا نہیں۔ تم نے ہماری ہر ایک چیز کو چھین لیا۔ اور پھر کہتے ہو کہ ہم تمہارے نعرے کیوں نہیں لگاتے ہیں۔ کشمیر، جموں اور لداخ کے لوگ تب کا آپ کا نعرے نہیں لگائیں گے جب تک آپ ان کے دلوں کو جیتنے کی کوشش نہیں کرو گے۔ اگر آپ کو ان کے دلوں کو جیتنا ہے تو ان کی خودمختاری ان کو واپس کردو‘۔

فاروق عبداللہ نے کانگریس لیڈر پی چدمبرم کے بیان کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا ’ چدمبرم غلط نہیں ہیں، لیکن مجھے افسوس کانگریس پر بھی ہے۔ تم نے ہی تو یہ سب چیزیں ہم سے چھین لیں۔ اب تو واپس کرو۔ اب کس چیز کا انتظار کررہے ہو‘۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز