شاہ فیصل کی ایمانداری اوردیانتداری پرسوال اٹھانا نہایت افسوسناک: عمرعبداللہ

سابق وزیر اعلیٰ عمرعبداللہ نے کہا کہ آئی اے ایس افسر شاہ فیصل کی ایمانداری اور دیانتداری پر سوال اٹھانا ان کے ساتھ سب سے بڑی ناانصافی ہے۔

Jul 11, 2018 06:34 PM IST | Updated on: Jul 11, 2018 06:35 PM IST

سری نگر: نیشنل کانفرنس کے نائب صدراورسابق وزیر اعلیٰ عمرعبداللہ نے کہا کہ آئی اے ایس افسر شاہ فیصل کی ایمانداری اور دیانتداری پر سوال اٹھانا ان کے ساتھ سب سے بڑی ناانصافی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیصل کی ایمانداری پرآج تک کسی بھی فرد نے انگلی نہیں اٹھائی ہے۔

عمر عبداللہ نے ان باتوں کا اظہار بدھ کے روز یہاں اپنی دادی بیگم اکبر جہاں کی 18 ویں برسی کے سلسلے میں نسیم باغ (حضرت بل) میں منعقدہ ایک تقریب کے حاشئے پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کیا۔

شاہ فیصل کی ایمانداری اوردیانتداری پرسوال اٹھانا نہایت افسوسناک: عمرعبداللہ

نیشنل کانفرنس لیڈر عمر عبداللہ: فائل فوٹو

واضح رہے کہ جموں وکشمیر حکومت نے 2010 بیچ کے آئی اے ایس ٹاپر شاہ فیصل کے خلاف محکمانہ تحقیقات شروع کردی ہے۔ شاہ فیصل جو اس وقت اسٹیڈی لیو (تعلیم کے لئے تعطیل) پر امریکہ میں ہیں، پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں بھارت کے لئے ’ریپستان ‘کا لفظ استعمال کیا ہے۔ 

Loading...

محکمانہ تحقیقات کے حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ شاہ فیصل اپنے فرائض کی انجام دہی کے دوران مطلق ایمانداری اور دیانتداری کو نبھانے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں۔

عمرعبداللہ نے نامہ نگاروں کو بتایا ’شاہ فیصل نے ریپ کے خلاف اپنی آواز بلند کی ہے۔ اس کے خلاف نہ صرف آپ نے تحقیقات شروع کی بلکہ اس کی ایمانداری اور دیانتداری پر سوال کھڑا کیا۔ آج تک اس کی ایمانداری پر کسی نے انگلی نہیں اٹھائی۔

حکم نامے میں اس کی خدمات کو نظرانداز کرکے اس کی ایمانداری اور دیانتداری پر سوال اٹھایا گیا ہے۔ یہ بہت غلط بات ہے۔ ان کے خلاف انکوائری کرنا بھی غلط ہے۔ کیونکہ آپ اس میں بھی من مرضی کرتے ہو۔ اگر آپ کو اس کے ٹویٹ پراعتراض ہے تو آپ اپنا اعتراض جتائیں۔ لیکن اس کی ایمانداری اوردیانتداری پرسوال اٹھانا اس کے ساتھ سب سے بڑی ناانصافی ہے‘۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز