پورے ملک میں نیشنل موومنٹ فرنٹ ’بھارت جوڑو‘ تحریک شروع کرے گی: سوربھ واجپئی

Aug 10, 2017 02:49 PM IST | Updated on: Aug 10, 2017 02:49 PM IST

نئی دہلی۔  نیشنل موومنٹ فرنٹ (این ایم ایف) نے پورے ملک میں ’ہندوستان چھوڑ‘ تحریک کی 75ویں سالگرہ کے موقع پر 9اگست 2017سے 9اگست2018تک پورے ملک میں’ بھارت جوڑو‘ تحریک چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔یہ بات این ایم ایف کے جنرل سکریٹری سوربھ واجپئی نے کہی۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے جو حالات ہیں، معاشرے میں جس طرح انتشار پھیل رہا ہے، لوگوں میں نفرت اور اشتعال انگیزی بڑھ رہی ہے اور لوگوں میں عدم اعتماد اور عدم برداشت کی قوت میں کمی واقع ہورہی ہے اسے ختم یا کم کرنے کے لئے این ایم ایف نے ملک گیر پیمانے پر بھارت جوڑو تحریک چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کی شروعات ’ہندوستان چھوڑو‘ تحریک کی 75ویں سالگرہ کے موقع پر جنتر منتر سے کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ این ایم ایف کا مقصد یہ ہے کہ ہم متحد ہوکر ہی تمام چیلنجوں کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں اپنے ہی کچھ لوگ ہیں جو گوکھلے، گاندھی،نہرو، سردار پٹیل، مولانا آزاد، چندر شیکھر آزاد، بھگت اور اس طرح ہیروؤں کے بنائے اور بتائے اصولوں کے خلاف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انگریزوں نے ’پھوٹ ڈالو حکومت کرو‘ کی پالیسی کے تحت ہماری تقسیم کا جو راستہ اختیار کیا تھا بدقسمتی سے وہ اسی راستے پر چل رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ این ایم ایف کے آج کے حالات میں’ ہندوستان جوڑو تحریک‘ کی اپیل کرتا ہے اور ہندو مسلم، سکھ، عیسائی ، پارسی ،بدھ اور جین سبھی ایک عظیم ملک کے شہری ہیں اور ہم سب ’ایک بنو نیک بنو‘ کے تحریک لیکر نکلے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم پورے ملک میں اپنے عہدیداروں اور کارکنوں کے ذریعہ یہ پیغام دیں گے کہ نفرت کا انجام تباہی ہے اور محبت کا انجام کامیابی اور خوشگوار تعلقات ہے۔ ہم کو ایک دوسرے سے نفرت کرنے کے بجائے ایک ساتھ شیرو شکر کی طرح رہنا چاہئے اور ایک دوسرے کے دکھ درد میں شریک ہونا چاہئے۔

پورے ملک میں نیشنل موومنٹ فرنٹ ’بھارت جوڑو‘ تحریک شروع کرے گی: سوربھ واجپئی

انہوں نے کہاکہ این ایف ایم اس پیغام کو ساری ریاستوں کی راجدھانی اور بڑے شہروں کے لیکر گاؤں تک جائے گا اور چھوٹے اور بڑے پروگرام کے ذریعہ لوگوں میں محبت و الفت ، فرقہ وارانہ آہنگی، قومی یک جہتی اور اتحاد پیدا کرنے کی کوشش کرے گا۔ جنترمنتر پر منعقدہ اس پروگرام میں دیگر شرکاء میں این ایم ایف کی صدر رچا راج اسسٹنٹ پروفیسر دہلی یونیورسٹی، نائب صدر اٹل تیواری دہلی یونیورسٹی، عابد انور صحافی، ایامرزا، عبدالعظیم، سونو راجیش، پرسنن پربھاکرر،، انجم، سنبل اور محمد آرش جامعہ ملیہ اسلامیہ وغیرہ شامل تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز