گجرات انتخابات کے بعد راہل گاندھی کا سیاسی قد بڑھا: نوجوت سنگھ سدھو

Dec 20, 2017 08:31 AM IST | Updated on: Dec 20, 2017 08:31 AM IST

جالندھر۔ پنجاب کے مقامی بلدیات کے وزیر نوجوت سنگھ سدھو نے کہا کہ مسٹر راہل گاندھی نے کانگریس کے صدرکے طورپر ذمہ داری سنبھالنے کے ساتھ ہی گجرات میں حال ہی میں ہوئے انتخابات کے بعد پارٹی میں نئی جان ڈال دی ہے۔ مسٹر سدھو نے نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر گاندھی بہت ہی اچھے آدمی ہیں اور الیکشن کی تشہیر کے دوران انہوں نے اپنی ترقی پسند اور مثبت سوچ کی وجہ سے بہت نام کمایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گجرات اسمبلی انتخابات کے بعد کانگریس ملک کی ایک مضبوط اپوزیشن پارٹی کے طورپر ابھر کر سامنے آئی ہے۔ کانگریس پارٹی مسٹر گاندھی کی قیادت میں جلد ہی فرقہ پرست طاقتوں کو شکست دیکر واپسی کرے گی۔

ایک سوال کے جواب میں کابینی وزیرنے کہا کہ فرقہ پرستی ملک کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس ایک سیکولر پارٹی ہے جس نے ہمیشہ ملک کے اتحاد اور یکجہتی کو برقرار رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس مستقبل میں بھی ملک مخالف اور ملک کو تقسیم کرنے والی طاقتوں کی مخالفت کرے گی۔ مسٹر سدھو نے کہا کہ پنجاب کے لوگوں نے فرقہ پرست جماعتوں کو ریاست سے باہر نکالا اور ا ب اس عمل کو قومی سطح پر بھی دہرائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس کبھی بھی ووٹروں کا ذات اور مذہب کی بنیاد پر بٹوارہ نہیں کرتی کیونکہ کانگریس نے حب الوطنی اور قومی اتحاد کے فروغ کو ہمیشہ برقرار رکھا ہے۔ کانگریس نے ہمیشہ ملک کی سیاست میں مثبت کردار ادا کیا ہے اور اسے مستقبل میں بھی جاری رکھے گی۔

گجرات انتخابات کے بعد راہل گاندھی کا سیاسی قد بڑھا: نوجوت سنگھ سدھو

پنجاب کے مقامی بلدیات کے وزیر نوجوت سنگھ سدھو: فائل فوٹو۔

مسٹر سدھو نے کہا کہ یہ افسوسناک ہے کہ بی جے پی کے لیڈروں نے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ پر نہایت گھٹیا اور جھوٹے الزامات لگائے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر منموہن سنگھ ایماندار شخص ہیں اس لئے انہیں دنیا میں انکی اہلیت اور صاف ستھری شبیہ کے لئے جانا جاتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز