کیجریوال حکومت کو جھٹکا، بیجل نے لوٹائی ڈی ٹی سی کے کرائے میں کمی کی تجویز

Jan 13, 2017 12:39 PM IST | Updated on: Jan 13, 2017 12:39 PM IST

نئی دہلی : دہلی میں کیجریوال حکومت اور نئے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کے درمیان جنگ کا آغاز ہو گیا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل نے کیجریوال حکومت کی اس تجویز کو لوٹا دیا ہے ، جس میں ڈی ٹی سی بسوں کے کرایہ میں 75 فیصد کمی کی تجویز پیش کی گئی تھی۔ لیفٹیننٹ گورنر بیجل نے تجویز کو لوٹانے کے پیچھے وزارت خزانہ کی منظوری نہ ہونے کا حوالہ دیا ہے۔

دہلی ٹرانسپورٹ کارپوریشن (ڈی ٹی سی) اور كلسٹر بسوں کے کرایہ میں کمی کی تجویز کے مطابق مسافروں کو اے سی بسوں میں کرایہ کے طور پر صرف 10 روپے اور نان اے سی بسوں میں 5 روپے کرایہ دینا ہوتا، لیکن لیفٹیننٹ گورنر بیجل کی تجویز لوٹانے کے بعد ایسا ہوتا نظر نہیں آرہا ہے۔ فی الحال کرایہ نان اے سی بسوں میں 5، 10 اور 15 روپے اور اے سی بسوں میں 15، 20 اور 25 روپے ہے ۔ دہلی حکومت کی 4500 بسیں چلتی ہیں۔

کیجریوال حکومت کو جھٹکا، بیجل نے لوٹائی ڈی ٹی سی کے کرائے میں کمی کی تجویز

خیال رہے کہ 4 جنوری کو وزیر ٹرانسپورٹ ستیندر جین نے کہا تھا کہ دہلی حکومت نے مجوزہ سٹی بس کرایہ میں کمی کی فائل منظوری کے لئے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کے پاس بھیجی ہے۔ انہوں نے تجویز کو ایک دو دن میں منظوری ملنے کی بھی امید ظاہر کی تھی۔ دہلی حکومت نے یہ فیصلہ جنوری میں آلودگی سے مقابلہ اور زیادہ سے زیادہ لوگوں کو عوامی نقل و حمل کے استعمال کی طرف راغب کرنے کے لئے لیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز