دہلی حکومت کو بڑا جھٹکا ، طاق اور جفت کے دوران دوپہیہ گاڑیوں کو بھی چھوٹ دینے سے این جی ٹی کا انکار

راجدھانی میں خطرناک آلودگی پر قابو پانے کی مہم کے تحت طاق اور جفت اسکیم نافذ کرنے کے معاملہ میں دہلی حکومت کو آج نیشنل گرین ٹربیونل (این جی ٹی )نے بڑاجھٹکادیا۔

Dec 15, 2017 09:16 PM IST | Updated on: Dec 15, 2017 09:16 PM IST

نئی دہلی: راجدھانی میں خطرناک آلودگی پر قابو پانے کی مہم کے تحت طاق اور جفت اسکیم نافذ کرنے کے معاملہ میں دہلی حکومت کو آج نیشنل گرین ٹربیونل (این جی ٹی )نے بڑاجھٹکادیا۔ این جی ٹی نے اسکیم کے دوران دوپہیہ گاڑیوں کوچھوٹ دئے جانے کے لئے حکومت کی طرف سے دائر نظر ثانی کی عرضی خارج کردی ۔

نظرثانی کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے این جی ٹی سربراہ جسٹس سوتنترکمار نے کہا کہ طاق جفت اسکیم کے تحت کسی بھی طرح کی چھوٹ دینے سے راجدھانی کی آلودہ فضاکو بہتربنانے کا مقصدہی فوت ہوجائیگا۔ انھوں نے کہا کہ اس میں کوئی دورائے نہیں کہ دہلی میں 60لاکھ سے زیادہ دوپہیہ گاڑیاں ہیں ۔ان میں بڑی تعداد میں دوپہیہ گاڑیاں بہت پرانی ہیں اور ان سے نکلنے والادھواں اخراج کی طے شدہ حد کے مقابلہ میں کہیں زیادہ ہے ۔

دہلی حکومت کو بڑا جھٹکا ، طاق اور جفت کے دوران دوپہیہ گاڑیوں کو بھی چھوٹ دینے سے این جی ٹی کا انکار

جسٹس کمارنے کہا کہ اس بات پر بھی کوئی تنازعہ نہیں ہے کہ دوپہیہ گاڑیوں سے ہونے والا اخراج آلودگی کی ایک بڑی وجہ ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز