اترپردیش : پولیس افسر کا عصمت دری متاثرہ سے جنسی تعلقات قائم کرنے کا مطالبہ ، این ایچ آر سی نے بھیجا نوٹس

Jun 28, 2017 11:39 PM IST | Updated on: Jun 28, 2017 11:39 PM IST

نئی دہلی: قومی انسانی حقوق کمیشن نے اترپردیش کے رامپور میں عصمت دری کی ایک متاثرہ کے ساتھ ایک پولیس افسر کے جنسی تعلق قائم کرنے کے مطالبہ سے متعلق میڈیا رپورٹ پر از خود نوٹس لیتے ہوئے ریاستی حکومت سے چار ہفتوں کے اندر جواب طلب کیا ہے۔

کمیشن نے آج یہاں بتایا کہ رپورٹوں کے مطابق جنسی استحصال معاملے کی جانچ کر رہے گنج تھانہ کے تفتیشی افسر نے متاثرہ سے کہا کہ وہ پہلے اس سے جنسی تعلق قائم کرے تبھی وہ ملزمین کے خلاف کارروائی کرے گا۔ عورت کے ایسا کرنے سے انکار کرنے پر پولیس افسر نے مبینہ طور پر معاملے کو بند کردیا۔ کمیشن نے میڈیا کی اس رپورٹ کو حیران کرنے والا قرار دیتے ہوئے ریاست کی چیف سکریٹری اور پولیس ڈائریکٹر جنرل کو نوٹس جاری کرکے چار ہفتوں کے اندر رپورٹ پیش کرنے کو کہا ہے۔

اترپردیش : پولیس افسر کا عصمت دری متاثرہ سے جنسی تعلقات قائم کرنے کا مطالبہ ، این ایچ آر سی نے بھیجا نوٹس

کمیشن نے واقعہ پر سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا، ’یہ رکشک کے بھکشک‘ بننے کی زندہ جاوید مثال ہے۔ اگر واقعی ایسا ہوا ہے تو اس سے قانون و انتظام نافذ کرنے والی ایجنسیوں میں پھیلی بُرائیوں کا صاف پتہ چلتا ہے۔ اس سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ انصاف پانے کے عوام کے حقوق کے تئیں ان میں احترام کی کمی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس سال کے آغاز میں دو افراد نے 37 سالہ اس عورت کی مبینہ طور پر آبرو ریزی کی۔ متاثرہ کی عرضی پر عدالت کی مداخلت کے بعد پولیس نے یہ معاملہ درج کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز