گورکھپور بی آر ڈی میڈیکل کالج میں بچوں کی موت کے معاملہ پر یوپی حکومت کو این ایچ آر سی کا نوٹس

Aug 14, 2017 08:19 PM IST | Updated on: Aug 14, 2017 08:19 PM IST

نئی دہلی: قومی انسانی حقوق کمیشن(این ایچ آر سی) نے گورکھ پور میں بی آر ڈی میڈیکل کالج میں 60سے زائد بچوں کی ہوئی موت کے معاملے میں آج اترپردیش حکومت کو نوٹس بھیج کر چار ہفتے کے اندر جواب طلب کیا ہے۔ گورکھ پور سانحہ معاملے میں پولیس میں باضابطہ کوئی رپورٹ درج نہیں کرائی گئی ہے۔ وزیر اعلی یوگی ادیتیہ ناتھ نے حالانکہ معاملے کی انکوائری کے لئے ریاست کے چیف سکریٹری کی صدارت میں ایک اعلی سطحی کمیٹی قائم کردی ہے اور حادثہ کے لئے بادی النظر میں قصور وار پاتے ہوئے میڈیکل کالج اسپتال کے پرنسپل راجیومشرا کو لاپرواہی برتنے کے الزام میں عہدہ سے ہٹا دیا گیا ہے۔

اس دوران سپریم کورٹ نے گورکھ پور سانحہ کی انکوائری خصوصی تفتیشی ٹیم سے کرانے کی اپیل والی ایک عرضی پر آج سماعت کرنے سے انکار کردیا۔ چیف جسٹس جے ایس کیہر اور جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ کی بنچ نے عرضی گذار وکیل کو اس معاملے میں الہ آباد ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹانے کا مشورہ دیتے ہوئے کہاکہ یہ اترپردیش کا معاملہ ہے اس لئے پہلے اسے ہائی کورٹ کے سامنے پیش کیا جانا چاہئے۔ عدالت نے یہ بھی کہاکہ ریاست کے وزیر اعلی یوگی ادیتیہ ناتھ ذاتی طورپر اس معاملے میں دلچسپی لے رہے ہیں۔

گورکھپور بی آر ڈی میڈیکل کالج میں بچوں کی موت کے معاملہ پر یوپی حکومت کو این ایچ آر سی کا نوٹس

خیال رہے کہ گورکھ پور بی آر ڈی کالج میں مبینہ طورپر آکسیجن کی کمی کی وجہ سے ساٹھ سے زیادہ بچوں کی موت ہوچکی ہے اور مسٹر ادیتہ ناتھ نے قصور وار افراد کے خلاف سخت کارروائی کی وارننگ دی ہے۔ اپوزیشن حکومت کے اس اقدام سے مطمئن نہیں ہے اور حکومت پر سخت حملے کررہی ہے ۔ کانگریس اور سماج وادی پارٹی نے مسٹر یوگی سے استعفی کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز