جنید قتل کیس: ریلوے اور ہریانہ پولیس کو این ایچ آر سی کا نوٹس

Jul 26, 2017 05:53 PM IST | Updated on: Jul 26, 2017 05:54 PM IST

نئی دہلی۔ قومی انسانی حقوق کمیشن (این ایچ آر سی) نے جنید قتل کیس میں ریلوے بورڈ کے چیئرمین اور ہریانہ پولیس کو نوٹس جاری کیا ہے۔ کمیشن نے اس معاملے میں دونوں سے چار ہفتے میں مکمل رپورٹ مانگی ہے۔ اس میں اب تک ہریانہ پولیس اور ریلوے نے کیا کیا، دونوں کو اس کی مکمل رپورٹ کمیشن کو دینی ہوگی۔

معلوم ہو کہ 22 جون کو صبح کے وقت فرید آباد کے كھنداولی گاؤں رہائشی حاسب اور اس کا حقیقی بھائی جنید عید کا سامان خریدنے کے لئے اے ایم یو سے دہلی کے صدر بازار گئے تھے۔ سامان خرید کرانہوں نے شام کو دہلی سے اے ایم یو ٹرین پکڑی تھی۔ اوکھلا ریلوے اسٹیشن سے قریب 15-20 مسافر ڈبے میں چڑھ گئے تھے۔ انہوں نے سیٹ کے لئے جھگڑا شروع کر دیا اور چاقو مار کر جنید کا قتل کر دیا تھا۔

جنید قتل کیس: ریلوے اور ہریانہ پولیس کو این ایچ آر سی کا نوٹس

جنید: فائل فوٹو

اس معاملہ میں ریلوے پولیس نے اہم ملزم نریش اور اس کا ساتھ دینے والوں کو گرفتار کر لیا تھا۔ اس کے بعد ملزمان کے گاؤں والوں نے پنچایت کر مطالبہ کیا کہ کوئی بے قصور اس معاملہ میں نہ پھنسایا نہ جائے۔

قتل کیس: فائل فوٹو

 

ہریانہ حکومت نے جنید کے خاندان کے ایک رکن کو وقف بورڈ میں ملازمت دی ہے۔ خاندان کو مالی مدد بھی دی گئی ہے۔ لیکن، جنید کے خاندان نے انصاف ملنے تک جدوجہد جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز