ٹیررفنڈنگ کیس :  اب این آئی اے کا حزب المجاہدین سربراہ سید صلاح الدین کے بیٹے شاہد کے گھر پر چھاپہ

وسطی کشمیر کے بڈگام ضلع میں آج یونائیٹڈ جہاد کونسل (يوجےسي) کے سربراہ محمد یوسف شاہ عرف سید صلاح الدین کے گھر پر چھاپہ مارا۔

Oct 26, 2017 12:28 PM IST | Updated on: Oct 26, 2017 01:08 PM IST

سری نگر: قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) نے جمعرات کی علی الصبح وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے سوئیبگ میں حزب المجاہدین کے سربراہ سید محمد یوسف شاہ عرف سید صلاح الدین کے فرزند سید شاہد یوسف کے گھر پر چھاپہ مار کر تلاشی لی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جانچ ایجنسی کی ایک ٹیم جمعرات کی علی الصبح قریب چار بجے ریاستی پولیس اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف)کے اہلکاروں کے ہمراہ سوئیبگ پہنچی اور وہاں شاہد یوسف کے گھر پر تلاشی کا سلسلہ شروع کردیا۔

انہوں نے بتایا کہ قریب تین گھنٹے تک جاری رہنے والی تلاشی کے بعد این آئی اے اہلکاروں نے افراد خانہ کے موبائیل فون، ایک لیپ ٹاپ اور کچھ دستاویزمزید جانچ پڑتال کے لئے اپنے قبضے میں لے لئے۔ ایک رپورٹ میں این آئی اے ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ گھر سے پانچ موبائیل فون، 2 ہارڈ ڈسکس ، ایک لیپ ٹاپ اور کچھ مشکوک دستاویزات ضبط کئے گئے ہیں۔ تلاشی کاروائی کے دوران کسی کو بھی شاہد یوسف کے گھر کی طرف جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔

ٹیررفنڈنگ کیس :  اب این آئی اے کا حزب المجاہدین سربراہ سید صلاح الدین کے بیٹے شاہد کے گھر پر چھاپہ

این آئی اے کی طرف سے یہ چھاپہ مار کاروائی شاہد یوسف کی نئی دہلی میں ایجنسی کے ہیڈکوارٹر پر گرفتاری کے دو روز بعد انجام دی گئی۔ شاہد یوسف جو کشمیر میں سرگرم جنگجو تنظیم حزب المجاہدین کے سربراہ اور پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر میں قائم متحدہ جہاد کونسل کے چیئرمین سید صلاح الدین کے فرزند ہیں، کو این آئی اے نے 24 اکتوبر کو 2011 ء کے ایک فنڈنگ کیس کے سلسلے میں ایجنسی کے نئی دہلی ہیڈکوارٹر میں طلب کیا تھا لیکن انہیں وہاں ابتدائی پوچھ گچھ کے بعد گرفتار کیا گیا۔

شاہد یوسف کو بدھ کے روز نئی دہلی میں ڈسٹرک اینڈ سیشنز جج کی عدالت میں پیش کیا گیا جنہوں نے شاہد کو ایک ہفتے کی ریمانڈ پر این آئی اے کی تحویل میں دے دیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جس کیس میں سید صلاح الدین کے بیٹے کو گرفتار کیا گیا ہے، وہ حزب المجاہدین کی فنڈنگ سے متعلق ہے۔ این آئی اے کا کہنا ہے کہ اعجاز احمد بٹ نامی شخص امریکہ میں قائم انٹرنیشنل وائر ٹرانسفر کمپنی کے توسط سے شاہد کو رقومات منتقل کرتا تھا۔

Loading...

ایجنسی نے اعجاز کو کیس میں مفرور قرار دیا ہے اور اسے شبہ ہے کہ وہ سعودی عرب میں مقیم ہے۔ این آئی اے نے دعویٰ کیا ہے کہ شاہد نے انٹرنیشنل وائر ٹرانسفر کے توسط سے قریب ساڑھے چار لاکھ روپے وصول کئے تھے اور یہ پیسے کشمیر میں گڑ بڑ پھیلانے کے لئے پاکستان سے حوالہ کے ذریعے بھیجے گئے تھے۔ ایجنسی نے اس سلسلے میں اپریل 2011 میں ایک کیس درج کیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ این آئی اے کے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس اجیت سنگھ کی جانب سے شاہد یوسف کے نام گذشتہ ہفتے جاری ہونے والے سمن میں کہا گیا تھا ’ آپ کو (2011 ء کے کیس کے سلسلے) میں بعض سوالوں کے جواب کے لئے طلب کیا جارہا ہے‘۔ انہوں نے بتایا کہ شاہد کو سمن میں 16 اکتوبر کو سری نگر اور بعدازاں 24 اکتوبر کو نئی دہلی میں این آئی اے کے سامنے حاضر ہونے کے لئے کہا گیا تھا۔ شاہد کو نئی دہلی ہیڈکوارٹر میں حاضر ہونے سے قبل سری نگر کے مضافاتی علاقہ ہمہامہ میں واقع این آئی اے کے دفتر پر چار مرتبہ حاضر ہونا پڑا تھا۔ شاہد یوسف جموں وکشمیر حکومت کے محکمہ زراعت میں ملازمت کررہے ہیں۔

ان کے والد سید صلاح الدین انیس سو نوے کی دہائی میں پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر منتقل ہوئے تھے۔ این آئی اے پہلے ہی متعدد علیحدگی پسند لیڈران، دو مبینہ سنگبازوں اور ایک کشمیری تاجر کی گرفتاری عمل میں لاچکی ہے۔ این آئی اے نے 5 ستمبر کو جنوبی کشمیر میں دو مبینہ سنگبازوں کو گرفتار کیا۔ انہیں مبینہ طور پر سنگ بازی کے واقعات میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ این آئی اے نے 6 اور 7 ستمبر کوکشمیر، جموں، نئی دہلی، ہریانہ اور پنجاب میں کم از کم تین درجن مقامات پر چھاپے مار کر تلاشیاں لیں۔ یہ چھاپے علیحدگی پسند راہنماؤں اور تجارت پیشہ افراد کے گھروں اور دفاتر پر ڈالے گئے تھے۔

این آئی اے نے 24 جولائی کو 7 علیحدگی پسند لیڈران کو گرفتار کرکے نئی دہلی منتقل کیا جہاں انہیں ریمانڈ پر تہاڑ جیل میں مقید رکھا گیا ہے۔ ان میں حریت (گ) ترجمان ایاز اکبر، مسٹر گیلانی کے داماد الطاف احمد شاہ عرف الطاف فنتوش ، راجہ معراج الدین کلوال(حریت گ ضلع صدر) ،سینئر حریت گ لیڈر پیر سیف اللہ، حریت کانفرنس (ع) ترجمان شاہد الاسلام، نیشنل فرنٹ چیئرمین نعیم احمد خان اور فاروق احمد ڈار عرف بٹہ کراٹے شامل ہیں۔ این آئی اے نے 17 اگست کو کشمیری تاجر ظہور احمد شاہ وٹالی کو نئی دہلی میں گرفتار کیا۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز