ٹیرر فنڈنگ : این آئی نے گیلانی کے بیٹے کو بھیجا سمن ، گرفتار ملزم لیڈروں کا ہوگا لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ

Jul 28, 2017 12:02 AM IST | Updated on: Jul 28, 2017 12:02 AM IST

سری نگر : وادی کشمیر میں بدامنی پھیلانے کے لئے پاکستان سے فنڈ لینے کے معاملہ میں علیحدگی پسندوں پر نکیل کسنے کی طرف این آئی اے نے ایک اور قدم بڑھایا ہے۔ جمعرات کو این آئی اے نے اس معاملہ میں کشمیر کے علیحدگی پسند لیڈر سید علی شاہ گیلانی کے بڑے بیٹے کو پوچھ گچھ کرنے کے لئے سمن بھیجا ہے۔ این آئی اے ذرائع کے مطابق گیلانی کے بڑے بیٹے نسیم گیلانی سمیت 29 دیگر لوگوں کو پوچھ گچھ کے لئے سمن بھیجا گیا ہے، جو پتھر بازی کے ملزم ہیں۔ بتا دیں کہ گیلانی کا بیٹا نسیم ایک ڈاکٹر ہے۔

شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر این آئی اے کے ایک اہلکار نے کہا کہ 'ہم نے پاکستان اسپانسرڈ ٹیرر فائنانسنگ معاملہ کی جانچ کے تحت سید علی شاہ کے بڑے ، حریت رہنماؤں اور ان کے رشتہ دار اور کچھ پتھربازوں سمیت 29 کو نوٹس بھیجا ہے۔ ' افسر نے کہا کہ 30 لوگوں میں سے کچھ کو این آئی اے کے دہلی ہیڈکوارٹر اور کچھ کو سری نگر میں پیش ہونے کیلئے کہا ہے۔تاہم انہوں نے گیلانی سمیت حریت کے دیگر رہنماؤں اور جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے لیڈر یاسین ملک کو سمن جاری کرنے کے امکان کو مسترد نہیں کیا۔

ٹیرر فنڈنگ : این آئی نے گیلانی کے بیٹے کو بھیجا سمن ، گرفتار ملزم لیڈروں کا ہوگا لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ

ادھر کشمیر سے گرفتار پولیس ریمانڈ پر بھیجے گئے سات علیحدگی پسند لیڈروں کا لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ کیا جائے گا۔ یہ بات جمعرات کو این آئی اے نے کہی۔ ساتھ ہی ساتھ ایجنسی نے کہا کہ وہ اس معاملے میں دبئی کے حوالہ كاروبار سے وابستہ كنکشن کی بھی جانچ كرےگی ۔این آئی اے کا کہنا ہے کہ کشمیر میں سونے کی اسمگلنگ ٹیررفنڈنگ ​​کے اہم طریقوں میں سے ایک ہے۔ اس بات کی جانچ کے لئے بھی لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ اہم ہے۔ اگرچہ این آئی اے کا کہنا ہے کہ یہ ٹیسٹ ملزموں کی منظوری کے بعد ہی کیا جائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز