نیتی آیوگ کا 2024 سے ملک میں ایک ساتھ لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات کرانے کا مشورہ

Apr 30, 2017 08:12 PM IST | Updated on: Apr 30, 2017 08:12 PM IST

نئی دہلی : نیتی آیوگ نے سال 2024 سے لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات کو ایک ساتھ کروانے کا مشورہ دیا ہے۔ اس کے پس منظر میں آیوگ کا کہنا تھا کہ ایسا کرنے سے انتخابات کے دوران تشہیری موڈ میں جانے سے نظام حکومت میں رکاوٹ کم پڑے گا۔نیتی آیوگ نے کہا کہ اس تجویز کو نافذ کرنے سے زیادہ سے زیادہ چند مرتبہ اسمبلیوں کی مدت بڑھانی پڑے گی یا کچھ دنوں کی تخفیف کرنی پڑے گی۔

آیوگ نے الیکشن کمیشن سے اس پر غور کرنے کی اپیل کی ہے اور ساتھ ہی ساتھ اس سلسلہ میں مکمل طور پر انتخابات کا روڈ میپ تیار کرنے کے لئے ایک ورکنگ گروپ قائم کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

نیتی آیوگ کا 2024 سے ملک میں ایک ساتھ لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات کرانے کا مشورہ

اس کمیٹی کو چھ ماہ کے اندر رپورٹ دینا ہو گا اور اس کا حتمی خاکہ اگلے مارچ تک تیار ہو جائے گا۔ اس ڈرافٹ رپورٹ کو 23 اپریل کو نیتی آیوگ کے گورننگ کونسل کے ارکان کے درمیان نشر کیا گیا۔ ان ارکان میں تمام ریاستوں کے وزیر اعلی اور دیگر لوگ شامل ہیں۔یہ سفارش اس لحاظ سے اہم ہے کیونکہ صدر پرنب مکھرجی اور وزیر اعظم مودی بھی لوک سبھا اور اسمبلی کے انتخابات ایک ساتھ کروانے کی وکالت کر چکے ہیں۔

نیتی آیوگ کی ڈرافٹ رپورٹ کے مطابق ہندوستان میں تمام انتخابات آزادانہ، منصفانہ اور پرامن طریقے سے ہونے چاہئے تاکہ نظام حکومت میں تشہیری موڈ 'کی وجہ سے ہونے والا خلل کم سے کم کیا جا سکے۔ ہم سال 2024 کے انتخابات سے اس سمت میں کام شروع کر سکتے ہیں۔ 'اس سال یوم جمہوریہ کے موقع پر مکھرجی نے اپنی تقریر میں لوک سبھا اور اسمبلی کے انتخابات کو ایک ساتھ کروانے کی وکالت کی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز