ایک مہینہ میں دہلی ۔ممبئی ایکسپریس وے کا کام شروع ہو جائے گا: گڈکری

نئی دہلی۔ دہلی اور ممبئی کے درمیان بننے والے نئے ایکسپریس وے کا کام ایک مہینہ میں شروع ہوجائے گا جس سے قومی دارالحکومت اور اقتصادی راجدھانی کے درمیان کی دوری تقریباًً 135کلومیٹر کم ہوجائے گی۔

Apr 17, 2018 02:36 PM IST | Updated on: Apr 17, 2018 02:36 PM IST

نئی دہلی۔ دہلی اور ممبئی کے درمیان بننے والے نئے ایکسپریس وے کا کام ایک مہینہ میں شروع ہوجائے گا جس سے قومی دارالحکومت اور اقتصادی راجدھانی کے درمیان کی دوری تقریباًً 135کلومیٹر کم ہوجائے گی۔ سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کے وزیر نتن گڈکری نے آج یہاں ایک پروگرام میں بتایا کہ نئے ایکسپریس وے پربڑودہ۔ممبئی سیکشن کے پانچ میں سے چار پیکج کے لئے ٹھیکہ الاٹ کیا جاچکا ہے ۔ پانچویں پیکج کا ٹھیکہ ایک مہینہ میں الاٹ ہو جائے گا۔ اس کے بعد اس سیکشن پر تعمیراتی کام شروع ہوجائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ دہلی ۔بڑودہ سیکشن پر بھی اسی سال کام شروع ہونے کی امید ہے۔

گڈکری نے انڈین انشورنس انسٹی ٹیوٹ(آئی آئی آئی) اور انڈین ٹرانسپورٹ کارپوریشن (آئی ٹی سی) کے ذریعہ مشترکہ طورپر تیار ایک رپورٹ کی لانچنگ کے موقع پر کہا کہ دہلی ۔ممبئی کے موجودہ سڑک راستے سے ایکسپریس وے کا راستہ علیحدہ اور چھوٹا ہوگا۔ نیا ایکسپریس وے بننے کے بعد دہلی اور ممبئی کے درمیان کی دوری تقریباًً 135کلومیٹر کم ہوجائے گی اور سفر کم ہوکر گیارہ گھنٹے کا رہ جائے گا۔ اسی طرح وقت میں بھی چالیس فیصد کی بچت ہوگی۔ اس پورے ایکسپریس وے پر کوئی چیک پوسٹ نہیں ہوگی۔

ایک مہینہ میں دہلی ۔ممبئی ایکسپریس وے کا کام شروع ہو جائے گا: گڈکری

سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کے وزیر نتن گڈکری: فائل فوٹو۔

 گڈکری نے بتایا کہ نیا ایکسپریس وے ہریانہ‘ راجستھان‘ مدھیہ پردیش‘ گجرات اور مہاراشٹر کے پسماندہ علاقوں سے ہوکر گزرے گا۔ اس سے پروجیکٹ کے حصول میں 16سے 20ہزار کروڑ روپے کی بچت ہوگی۔ ساتھ ہی اسے اقتصادی صنعتی کوریڈور بنایا جائے گا جس سے آس پاس کے علاقوں کی ترقی ہو سکے۔ رپورٹ میں لاجسٹک سیکٹر میں انشورنس کی اہمیت کے بارے میں بتایا گیا ہے ۔ اس کے بارے میں گڈکری نے کہا کہ حکومت لاجسٹک انشورنس کو لازمی بنانے کے حق میں نہیں ہے۔ انشورنس کمپنیوں کو خود صارفین کو راغب کرنے والی اسکیمیں تیار کرنی چاہئیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز