یوپی انتخابات جیتنے کیلئے گاندھی اور بھگت سنگھ کو بنایا پرستاوک ، تو پوٹن کو بتایا سب سے اچھا دوست

Jan 29, 2017 08:28 AM IST | Updated on: Jan 29, 2017 08:28 AM IST

نوئیڈا : اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں کاغذات نامزدگی داخل کرنے والے امیدوار ووٹروں کو لبھانے کے لئے طرح طرح کے طریقے اپنا رہے ہیں ، جو کسی کا بھی سر چکرا سکتے ہیں ۔نوئیڈا اسمبلی سیٹ سے کاغذات نامزدگی داخل کرنے والے ایک آزاد امیدوار ونود پوار نے بابائے قوم مہاتما گاندھی اور عظیم انقلابی لیڈر شہید بھگت سنگھ کو اپنا پرستاوک بنا دیا ہے۔

یہی نہیں ونود پوار نے روس کے صدر ولادیمیر پوتن کو اپنا سب سے اچھا دوست بتاتے ہوئے ان کا نام بھی پرستاوكوں کی فہرست میں شامل کیا ہے ۔ جانچ کے بعد آزاد امیدوار کے کاغذات نامزدگی کو منسوخ کر دیا گیا ۔

یوپی انتخابات جیتنے کیلئے گاندھی اور بھگت سنگھ کو بنایا پرستاوک ، تو پوٹن کو بتایا سب سے اچھا دوست

دلچسپ بات یہ ہے کہ کاغذات نامزدگی میں ونود پوار نے نام کے کالم میں شعرو شاعری بھی کی ہے ۔ پرستاوكوں کی فہرست میں شہید بھگت سنگھ ، مہاتما گاندھی ، سوامی وویکانند ، مارٹن لوتھر، ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر، ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام ، نیلسن منڈیلا ، سبھاش چندر بوس ، گوتم بدھ ، راج گرو، اشفاق اللہ خاں، جان ایف کینیڈی، محمد رفیع سمیت 21 عظیم شخصیات کے نام دیئے ہیں ۔

ضلع الیکشن افسر این پی سنگھ کے مطابق الیکشن نظام کا مذاق اڑانا غلط ہے ۔ کاغذات نامزدگی میں الیکشن انتظامات کا مذاق اڑانے والے کے خلاف مقدمہ درج کرایا جائے گا ۔ اس کی تیاری کی جا رہی ہے ۔ جلد ہی مقدمہ درج ہوگا ۔

گوتم بدھ نگر ضلع میں اس مرتبہ کل 36 امیدوار میدان میں ہیں اور ایک دوسرے کے خلاف جدوجہد کرتے نظر آ رہے ہیں ۔ اس میں نوئیڈا سے 14 ، دادری سے 14 ، اور زیور سے 8 امیدوار رکن اسمبلی بننے کی دوڑ میں شامل ہیں ۔ پہلے مرحلے کے لئے گوتم بدھ نگر کی تین سیٹوں پر 11 فروری کو پولنگ ہوگی ۔

خیال رہے کہ اتر پردیش میں 11 فروری سے 8 مارچ کے درمیان سات مراحل میں اسمبلی انتخابات ہو رہے ہیں ۔  کانگریس ، نیشنل لوک دل اور سماج وادی پارٹی کے درمیان اتحاد کے باوجود کثیر رخی مقابلہ ہونے کی امید ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز