بڑھتے ریل حادثات: متل کا استعفی، اشونی لوہانی ریلوے بورڈ کے نئے چیئرمین

Aug 23, 2017 07:55 PM IST | Updated on: Aug 23, 2017 07:55 PM IST

نئی دہلی۔  گزشتہ چار دنوں میں دو ریلوے حادثوں کے بعد ریلوے بورڈ کے چیئرمین اے کے متل نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا۔ حکومت نے انکا استعفی منظور کرتے ہوئے ایئرانڈیا کے چیئرمین اور مینیجنگ ڈائریکٹر اشونی لوہانی کو ریلوے بورڈ کا نیا چیئرمین مقرر کیا ہے ۔ سرکاری اطلاع کے مطابق، کابینہ کی تقرر کمیٹی نے مسٹر لوہانی کو مسٹر متل کی جگہ ریلوے بورڈ کے نئے چیئرمین کے طور پر مقرر کیا ہے۔ سرکاری نوٹ میں کہا گیا ہے کہ ریلوے کی وزارت کو اس سلسلے میں ضروری اطلاع دیدی گئی ہے۔

مسٹر متل کی میعاد کار میں گزشتہ سال جولائی میں ہی دو سال کی توسیع کی گئی تھی ۔  ہندستانی ریلوے کی مكینیكل انجینئرنگ سروس کے افسر مسٹر لوهاني ایئر انڈیا کے چیئرمین اور مینیجنگ ڈائریکٹر کا عہدہ سنبھالنے سے پہلے ریلوے میں ہی تھے۔ وہ ہندستانی ریل کے دہلی ڈویژن میں ڈي آرایم رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ نیشنل ریل میوزیم کے ڈائریکٹر، ریل الٹرنیٹ ایندھن کے چیف ایگزیکٹیو افسر بھی رہے ہیں۔ اس دوران ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے بھی آج اپنے عہدے سے استعفی کی پیشکش کی، تاہم، وزیر اعظم نریندر مودی نے ان سے ابھی انتظار کرنے کو کہا ہے۔

بڑھتے ریل حادثات: متل کا استعفی، اشونی لوہانی ریلوے بورڈ کے نئے چیئرمین

ہندستانی ریلوے کی مكینیكل انجینئرنگ سروس کے افسر مسٹر لوهاني ایئر انڈیا کے چیئرمین اور مینیجنگ ڈائریکٹر کا عہدہ سنبھالنے سے پہلے ریلوے میں ہی تھے۔

گزشتہ چار دن میں دو ریل حادثات سے یہ حالات پیدا ہوئے ہیں ۔ گزشتہ ہفتہ کو ہوئے پہلے حادثے میں اتر پردیش کے مظفرنگر ضلع میں كلنگ اتكل ایکسپریس کے پٹری سے اتر جانے کی وجہ سے 23 لوگوں کی موت ہو گئی تھی اور کئی لوگ زخمی ہو گئے تھے۔ اس کے بعد ریلوے بورڈ کے رکن (انجینئرنگ)، شمالی ریلوے کے جنرل مینیجر اور دہلی کے بورڈ آف ریلوے مینیجر کو گزشتہ اتوار کو چھٹی پر بھیج دیا گیا تھا اور شمالی ریلوے کے چیف ٹریک انجینئر کا تبادلہ کرنے کے ساتھ ساتھ چار افسران کو معطل کر دیا گیا تھا۔

دوسرے حادثے میں آج علی الصبح اترپردیش کے اوريا ضلع میں ایک ڈمپر سے ٹکرانے کے بعد کیفیات ایکسپریس کے 10 ڈبے اور انجن پٹری سے اتر گئے۔ حادثے میں 78 مسافر زخمی ہو گئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز