اب سی بی آئی کرے گی تحقیقات، آخر جے این یو سے کہاں گیا نجیب احمد؟

May 16, 2017 04:19 PM IST | Updated on: May 16, 2017 04:19 PM IST

نئی دہلی۔ جے این یو کے لاپتہ طالب علم نجیب احمد معاملے کی جانچ اب سی بی آئی کرے گی۔ دہلی ہائی کورٹ نے چھ ماہ گزر جانے کے باوجود نجیب کا پتہ لگانے میں ناکام رہی دہلی پولیس سے کیس لے کر اسے سی بی آئی کے حوالے کر دیا ہے۔ دہلی ہائی کورٹ میں کیس کی سماعت کر رہی جسٹس وپن سانگھی اور جسٹس دیپا شرما کی بنچ نے منگل کو یہ حکم جاری کیا ہے۔ غور طلب ہے کہ نجیب کو لے کر عدالت اس سے پہلے معاملے کی جانچ کررہی ایس آئی ٹی کی لیٹ لطیفی پر پھٹکار لگا چکی ہے۔ وہیں نجیب کی ماں فاطمہ نے بھی کورٹ سے ایس آئی ٹی منسوخ کرنے کی مانگ کی تھی۔ فاطمہ نے کورٹ کی نگرانی میں ٹیم قائم کر اس معاملے کی جانچ سونپنے کے لئے فریاد کی تھی۔

کون ہے نجیب احمد، کیا تھا معاملہ

اب سی بی آئی کرے گی تحقیقات، آخر جے این یو سے کہاں گیا نجیب احمد؟

نجیب احمد جواہر لال نہرو یونیورسٹی کا طالب علم تھا جو اے بی وی پی کے ساتھ مبینہ ٹکراو کے بعد پر اسرار طور پر یونیورسٹی سے غائب ہو گیا۔ نجیب 15 اکتوبر 2016 کے بعد سے ہی کیمپس سے لاپتہ ہے۔ نجیب بايو ٹیکنالوجی میں ایم ایس سی کر رہا تھا۔ بتایا گیا کہ 14 اکتوبر کو اس کے اور اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے کچھ طالب علموں کے درمیان جھگڑا ہوا تھا۔ نجیب کے والدین کی شکایت کی بنیاد پر وسنت کنج تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

نجیب احمد کی ماں فاطمہ نفیس تبھی سے بیٹے کو تلاش کرنے کی اپیل کر رہی ہیں۔ نجیب کو تلاش رہی پولیس نجیب کے بارے میں معلومات دینے والے کے لئے ایک لاکھ روپے کا انعام بھی اعلان کر چکی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز