اب یوپی میں مسلمانوں کے لئے بھی ہوا شادی کا رجسٹریشن لازمی، یوگی حکومت نے دی منظوری

Aug 02, 2017 01:46 PM IST | Updated on: Aug 02, 2017 01:46 PM IST

لکھنئو۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی صدارت میں منگل کو ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں لازمی شادی رجسٹریشن دستور العمل کی منظوری دے دی گئی۔ اب مسلم سمیت تمام طبقات کے لئے شادی رجسٹریشن کرانا لازمی ہوگا۔ حکومت کے ترجمان سدھارتھ ناتھ سنگھ نے کہا کہ اس دوران کئی مسلم تنظیموں نے شادی رجسٹریشن کو لازمی کئے جانے کی مخالفت کی تھی۔ ان کا کہنا ہے کہ نكاح نامہ میں شادی شدہ جوڑوں کی تصویر نہیں ہونی چاہئے۔ حالانکہ حکومت نے ان کے اس بیان کو یہ کہتے ہوئے مسترد کر دیا ہے کہ آدھار اور پاسپورٹ پر تصویر ہو سکتے ہیں تو شادی رجسٹریشن میں کیوں نہیں۔

سدھارتھ ناتھ سنگھ نے کہا کہ مسلم مذہبی رہنماؤں کو جب اس بارے میں سمجھایا گیا تو وہ مان گئے۔ غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم کے بعد پیشرو اکھلیش حکومت نے بھی اسے لاگو کرنے کے لئے دستور العمل بنوایا تھا۔ لیکن اس وقت مسلم مذہبی رہنماؤں نے اکھلیش یادو سے ملاقات کر اس کی مخالفت کی تھی جس کے بعد حکومت نے اس پر روک لگا دی تھی۔

اب یوپی میں مسلمانوں کے لئے بھی ہوا شادی کا رجسٹریشن لازمی، یوگی حکومت نے دی منظوری

یوگی کے جنتا دربار میں مسلم خواتین: فائل فوٹو

شادی کا رجسٹریشن صرف 10 روپے میں ہو گا۔ جو بھی شادی کا رجسٹریشن نہیں کروائے گا اسے سرکاری سہولیات کا فائدہ نہیں ملے گا۔ غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم کے بعد صرف اتر پردیش اور ناگالینڈ میں ہی شادی رجسٹریشن لازمی نہیں کیا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز