مودی لہر وقتی ہے، زیادہ دیر تک نہیں چلے گی، لیکن ہمیں محتاط رہنے کی ضرورت : عمر عبداللہ

Mar 14, 2017 09:37 PM IST | Updated on: Mar 14, 2017 09:37 PM IST

سری نگر ۔  جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے کہا ہے کہ مودی لہر وقتی ہے اور یہ زیادہ دیر تک نہیں ٹکے گی۔ اُن کے یہ ریمارکس 11 مارچ کے بیان کے بالکل برعکس ہیں۔ خیال رہے کہ عمر عبداللہ جو کہ نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر بھی ہیں، نے 11 مارچ کو اترپردیش اور اتراکھنڈ سے سامنے آنے والے انتخابی نتائج پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ملک میں آج ایسا کوئی لیڈر نہیں جو 2019 ء کے پارلیمانی انتخابات میں وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کا مقابلہ کرسکے۔ انہوں نے کہا تھا کہ بی جے پی کو ہرانے کے لئے سیاسی جماعتوں کو اپنی حکمت عملی میں تبدیلی لانی پڑے گی۔

منگل کے روز یہاں نیشنل کانفرنس کور گروپ کے دو روزہ اجلاس کے پہلے دن کے اختتام پر نامہ نگاروں کی جانب سے مودی لہر سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں عمر عبداللہ نے کہا ’ مودی لہر وقتی ہے اور یہ زیادہ دیر نہیں ٹکی گی لیکن ہمیں محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔ سیاست میں اتار چڑھاو کوئی نئی بات نہیں، اگر مودی لہر اتنی ہی مضبوط ہوتی تو پنجاب میں کانگریس تاریخی جیت درج نہیں کرتی اور نہ ہی منی پور اور گوا میں کانگریس بی جے پی کو پچھاڑ کر سب سے بڑی پارٹی اُبھر کر سامنے آتی‘۔

مودی لہر وقتی ہے، زیادہ دیر تک نہیں چلے گی، لیکن ہمیں محتاط رہنے کی ضرورت : عمر عبداللہ

فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز