ڈی ایس پی محمد ایوب پنڈت کو مار ڈالنے لوگ اپنے گناہوں کیلئے جہنم میں جل کر راکھ ہوجائیں : عمر عبداللہ

Jun 23, 2017 05:35 PM IST | Updated on: Jun 23, 2017 05:35 PM IST

سری نگر: جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس محمد ایوب پنڈت کے قتل کو ایک سانحہ قرار دیا ہے۔ انہوں نے دعا کی ہے کہ جن لوگوں نے ڈی ایس پی پنڈت کو پیٹ پیٹ کر مار ڈالا ہے، وہ اپنی گناہوں کے لئے جہنم میں جل کر راکھ ہوجائیں۔

عمر عبداللہ جو کہ ریاست کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر بھی ہیں، نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’اس کی (پنڈت کی) موت ایک سانحہ ہے۔ خدا کرے کہ جن لوگوں نے ڈی ایس پی پنڈت کو پیٹ پیٹ کر مار ڈالا، وہ اپنی گناہوں کے لئے جہنم میں جل کر راکھ ہوجائیں‘۔

ڈی ایس پی محمد ایوب پنڈت کو مار ڈالنے لوگ اپنے گناہوں کیلئے جہنم میں جل کر راکھ ہوجائیں : عمر عبداللہ

انہوں نے مزید کہا ’وہ جموں وکشمیر پولیس کی سیکورٹی ونگ میں بحیثیت ڈپٹی ایس پی تعینات تھا۔ میں سمجھ سکتا ہوں کہ وہ جامع مسجد میں رسائی کٹرول کے سلسلے میں سیکورٹی ڈیوٹی پر مامور تھا‘۔ دریں اثنا نیشنل کانفرنس نے پولیس ویلفیئر فنڈ میں پارٹی کی طرف سے دس لاکھ روپے جبکہ مسٹر عمر عبداللہ نے اپنی ایک ماہ کی تنخواہ جمع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز