Live Results Assembly Elections 2018

مجھے لگا تھا سونیا گاندھی مجھے وزیر اعظم اور منموہن سنگھ کو صدر جمہوریہ بنائیں گی: پرنب مکھرجی

پرنب دا لکھتے ہیں کہ 2012 میں صدارتی عہدے کے لئے امیدوار کا نام چل رہا تھا۔ میرے بارے میں بھی چرچا چل رہی تھی۔

Oct 14, 2017 09:46 PM IST | Updated on: Oct 14, 2017 09:47 PM IST

نئی دہلی۔ سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کے ملک کا ‘ اولین شہری’ بن جانے کے بعد بھی ان کے دل میں ملک کا وزیر اعظم نہ بن پانے کی کسک ہمیشہ برقرار رہی ہے۔ گزشتہ جمعہ کو انہوں نے نئی دہلی میں اپنی نئی کتاب‘ دی کوالیشن ائیرس: 1996-2012 کا اجرا کیا جس میں سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی سمیت کانگریس پارٹی اور دیگر پارٹیوں کے سینئر لیڈران نے شرکت کی۔ اپنے سیاسی سفر کو لے کر لکھی گئی اس کتاب میں پرنب مکھرجی نے خاصا تفصیل کے ساتھ اس کا ذکر کیا ہے۔

نو بھارت ٹائمس ڈاٹ کام کے مطابق، اس کتاب کے اجرا کے موقع پر سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے بھی ان کی اس منشا اور وزیر اعظم نہ بن پانے کی کسک کا ذکر کیا۔ تاہم سنگھ نے یہ بھی کہا کہ ان کے وزیر اعظم بن جانے کے باوجود دونوں کے بیچ رشتوں میں کہیں کوئی کمی نہیں آئی۔

مجھے لگا تھا سونیا گاندھی مجھے وزیر اعظم اور منموہن سنگھ کو صدر جمہوریہ بنائیں گی: پرنب مکھرجی

سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، دائیں، اور سابق صدر پرنب مکھرجی: فائل فوٹو۔

بہر حال، پرنب دا لکھتے ہیں کہ 2012 میں صدارتی عہدے کے لئے امیدوار کا نام چل رہا تھا۔ میرے بارے میں بھی چرچا چل رہی تھی۔ ایک دن کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے انہیں بلایا اور ان سے کہا کہ صدر کے لئے دوسرے کا نام تجویز کریں۔ اس میٹنگ کو یاد کرتے ہوئے پرنب دا لکھتے ہیں کہ سونیا گاندھی نے ان سے کہا، "مسٹر مکھرجی، اس  میں کوئی دو رائے نہیں ہے کہ آپ اس پوسٹ کے لئے سب سے زیادہ مناسب شخص ہیں، لیکن ساتھ ہی آپ کو یہ بھی نہیں بھولنا چاہئے کہ حکومت چلانے میں آپ کتنا اہم رول ادا کر رہے ہیں۔ کیا آپ اس پوسٹ کے لئے کسی دوسرے نام کی سفارش کرسکتے ہیں؟

Loading...

نئی دہلی میں سابق صدر پرنب مکھرجی کی نئی کتاب کے اجرا کے دوران کانگریس صدر سونیا گاندھی، نائب صدر راہل گاندھی، سی پی آئی ایم لیڈر سیتا رام یچوری اور ایس پی صدر اکھلیش سنگھ یادو ودیگر۔  نئی دہلی میں سابق صدر پرنب مکھرجی کی نئی کتاب کے اجرا کے دوران کانگریس صدر سونیا گاندھی، نائب صدر راہل گاندھی، سی پی آئی ایم لیڈر سیتا رام یچوری اور ایس پی صدر اکھلیش سنگھ یادو ودیگر۔

مکھرجی کا کہنا ہے کہ سونیا گاندھی سے ملنے کے بعد انہوں نے محسوس کیا کہ ڈاکٹر منموہن سنگھ کو صدر بنایا جا سکتا ہے اور وزیر اعظم کے لئے ان کے نام پر غور کیا جا سکتا ہے۔ اپنی اس سوچ کے پیچھے انہوں نے دو وجہیں بتائیں۔ پہلی، انہیں لگا تھا کہ سونیا گاندھی کو ان کی تنظیمی صلاحیت میں ہمیشہ سے بھروسہ رہا ہے۔ دوسری، تب یہ چرچا بہت ہوا تھا کہ منموہن سنگھ کو صدر اور انہیں پی ایم بنانے کے فارمولہ پر سونیا گاندھی نے اپنی چھٹیوں کے دوران کافی غوروخوض کیا تھا۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز