شمالی کشمیر میں ایل او سی پر دراندازی کی پانچویں کوشش ناکام، اب گریز سیکٹرمیں جنگجو ہلاک

Jun 10, 2017 02:36 PM IST | Updated on: Jun 10, 2017 02:36 PM IST

سری نگر ۔  فوج نے شمالی کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ میں لائن آف کنٹرول کے گریز سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے ایک جنگجو کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ یہ 6 جون سے شمالی کشمیر میں ایل او سی پر ناکام بنائی جانے والی دراندازی کی پانچویں کوشش ہے۔ دوسری جانب ایل او سی کے اوڑی سیکٹر میں 9 جون کو دراندازی کی کوشش ناکام بنائے جانے کے بعد جنگجوؤں اور فوجیوں کے مابین شروع ہونے والے تصادم میں ایک اور جنگجو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔ مزید ایک جنگجو کی ہلاکت کے ساتھ اوڑی سیکٹر میں مارے گئے جنگجوؤں کی تعداد بڑھ کر 6 ہوگئی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ شمالی کشمیر میں ایل او سی پر 7 جون سے دراندازی کی پے درپے پانچ کوششوں کو ناکام بناتے ہوئے 14 جنگجوؤں کو ہلاک کیا جاچکا ہے۔ تاہم 8 جون کو دراندازی کی کوششوں کو ناکام بنانے کے دوران ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے تھے۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ گریز سیکٹر میں تعینات فوجیوں نے جنگجوؤں کے ایک گروپ کو سرحد کے اس پار داخل ہوتے ہوئے دیکھا۔

انہوں نے بتایا کہ جب جنگجوؤں کو ہتھیار ڈال کر خودسپردگی اختیار کرنے کے لئے کہا گیا تو انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے خودکار ہتھیاروں سے فوجیوں کو نشانہ بنانا شروع کردیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا ’طرفین کے مابین ہونے والی ابتدائی فائرنگ میں ایک جنگجو کو ہلاک کیا گیا ہے‘۔ انہوں نے بتایا کہ فوجیوں کی مزید کمک گریز سیکٹر روانہ کرکے وہاں بڑے پیمانے پر تلاشی آپریشن شروع کیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک گریز سیکٹر میں آپریشن جاری تھا۔ فوجیوں نے جمعہ کو ضلع بارہمولہ میں ایل او سی کے اوڑی سیکٹر میں دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے 6 دراندازوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ سرکاری ذرائع نے ہفتہ کی صبح یو این آئی کو اوڑی سیکٹر میں ہوئے تصادم کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجیوں نے 9 جون کی صبح اوڑی سیکٹر میں پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے جنگجوؤں کے ایک گروپ کو ہندوستانی علاقہ میں داخل ہوتے ہوئے دیکھا۔ تاہم جب جنگجوؤں کو للکارا گیا اور خود سپردگی اختیار کرنے کے لئے کہا گیا تو انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ شروع کی تھی۔

شمالی کشمیر میں ایل او سی پر دراندازی کی پانچویں کوشش ناکام، اب گریز سیکٹرمیں جنگجو ہلاک

ہندوستانی فوج: فائل فوٹو، پی ٹی آئی

انہوں نے بتایا کہ اس کے بعد طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ ہوا جس میں دو جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ نذدیکی کیمپوں سے فوجیوں کی مزید کمک طلب کی گئی تھی اور ایک وسیع علاقے کو محاصرے میں لیا گیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ جمعہ کی شام کو فورسز کا جنگجوؤں کے ساتھ آمنا سامنا ہوا اور طرفین کے مابین گولہ باری کے تبادلے میں مزید 3 جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔ ایک اور جنگجو کو جمعہ کی شام کو ہی دیر گئے ہلاک کیا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ اوڑی سیکٹر میں تاحال 6 جنگجوؤں کو ہلاک کیا جاچکا ہے جبکہ علاقہ میں تلاشی آپریشن کو جاری رکھا گیا ہے۔ فوج نے 6 جون کو مژھل سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے چار دراندازوں کو ہلاک کیا تھا۔ نوگام سیکٹر میں ایسی ہی ایک کاروائی میں تین جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا تھا۔ تاہم نوگام سیکٹر میں ایک جنگجو ہلاک جبکہ اوڑی سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کو ناکام بنانے کے دوران دو فوجی اہلکار زخمی ہوگئے تھے۔

گذشتہ ماہ کی 27 تاریخ کو فوج نے دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے بارہمولہ کے رامپور سیکٹر میں 6 جنگجوؤں کو ہلاک کیا تھا۔ اس سے قبل فوج نے 26 مئی کو اوڑی سیکٹر میں ایل او سی پر پاکستانی باڈر ایکشن ٹیم سے منسلک دو اہلکاروں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ فوج نے مذکورہ کاروائی کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا تھا کہ بیٹ سے منسلک دو اہلکاروں کو اُس وقت ہلاک کیا گیا جب وہ بھارتی فوج کی ایک گشتی پارٹی پر حملے کے ارادے سے بھارتی حدود میں داخل ہوگئے تھے۔ 21 مئی کو شمالی ضلع کپواڑہ کے نوگام سیکٹر میں جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی ایک خونریز جھڑپ میں 4 جنگجو اور 3 فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔ رپورٹوں کے مطابق گذشتہ پانچ مہینوں کے دوران پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے دراندازی کی 22 کوششوں کو ناکام بنایا گیا جس کے دوران 34 جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز