دہلی کے اسکولوں میں اردو تعلیم کی صورتحال انتہائی تشویشناک ، 1027 میں صرف سے 24 اردو میڈیم اسکولس

Sep 13, 2017 11:42 PM IST | Updated on: Sep 13, 2017 11:42 PM IST

نئی دہلی : غالب اور میر کی دہلی میں اردو زبان کی تعلیم کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے ۔ نہ صرف اردو میڈیم اسکولوںکی تعداد کم ہوئی ہے بلکہ اردو اساتذہ کی کمی وجہ سے دو تہائی مسلم طلبہ اردو زبان پڑھ نہیں پارہے ہیں ۔ خیال رہے کہ دہلی میں 1027 اسکول دہلی حکومت کے ماتحت چلتے ہیں ، جن میں اردو میڈیم اسکولوں کی تعداد کم ہوکر اب صرف 24 رہ گئی ہے۔ تاہم 1027 میں سے صرف 272 اسکولوں میں ہی اردو کی تعلیم دی جاتی ہے۔ مگر ان میں بھی اساتذہ کی وجہ سے اردو کے طلبہ کا کوئی پرسان حال ہی نہیں ہے۔

قابل ذکر ہے کہ دہلی حکومت کے ماتحت چلنے والے اسکولوں 284975 مسلم طلبہ زیر تعلیم ہیں۔ تاہم اردو زبان کو تیسری زبان کے طور پر پڑھنے والے بچوں کی تعداد صرف 95402 ہے۔ یعنی 190000 مسلم طبلہ وہ ہیں ، جن کو اردو آفر ہی نہیں کی جارہی ہے۔ آر ٹی آئی کارکن منظر علی کا کہنا ہے کہ دہلی حکومت کی نیت ہی صاف نہیں ہے ، جس کی وجہ سے اردو اساتذہ کی تقرری نہیں پارہی ہے سی ٹیٹ تو صرف ایک بہانہ ہے۔

دہلی کے اسکولوں میں اردو تعلیم کی صورتحال انتہائی تشویشناک ، 1027 میں صرف سے 24 اردو میڈیم اسکولس

علامتی تصویر

قابل ذکر ہے کہ دہلی میں اردو زبان کو 1999 میں دوسری سرکاری زبان کا درجہ دیا گیا تھا اور سہ لسانی فارمولہ کے تحت اردو اور پنجابی کو پڑھایا جانا تھا ، لیکن عجیب بات یہ ہے کہ آج بھی اسکولوں میں 600 سے زیادہ اردو اساتذہ کی سیٹیں خالی ہیں ۔ اس معاملہ کا ایک دوسرا پہلو یہ بھی ہے کہ 1995 کے بعد دہلی میں اردو اساتذہ کی مستقل تقرری عمل میں آئی ہی نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز