نوٹ بندی : کانگریس کا مودی حکومت پر حملہ ، 16 ہزار کروڑ کیلئے خرچ کردئے 21 ہزار کروڑ

کانگریس نے آر بی آئی کے اعداد و شمار کے پیش نظر نوٹ بندی کو پوری طرح ناکام قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ آج وزیر اعظم نریندر مودی اس معاملے پر ملک سے معافی مانگنی چاہئے۔

Aug 30, 2017 09:53 PM IST | Updated on: Aug 30, 2017 09:54 PM IST

نئی دہلی : کانگریس نے آر بی آئی کے اعداد و شمار کے پیش نظر نوٹ بندی کو پوری طرح ناکام قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ آج وزیر اعظم نریندر مودی اس معاملے پر ملک سے معافی مانگنی چاہئے۔ کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے آج یہاں ریزرو بینک کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ محض 16 ہزار کروڑ روپئے کے لئے نوٹ بندی کی گئی۔ انہوں نے نوٹ بندی کے نتائج پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ کھودا پہاڑ نکلی چوہیا، محض 16 ہزار کروڑ روپے کی تلاش کے لئے 21 ہزار کروڑروپئے خرچ کردئے گئے۔

مسٹر سرجے والا نوٹ بندی کو ایک گھوٹالہ قراردیتے ہوئے کہا کہ اس سے نہ صرف ریزرو بینک آف انڈیا کے وقار کو نقصان پہنچا بلکہ بیرون ملک ہندوستان کی ساکھ بھی متاثرہوئی ہے۔ مسٹر مودی کو اپنی اس فاش غلطی کے لئے ملک سے معافی مانگنی چاہئے۔

نوٹ بندی : کانگریس کا مودی حکومت پر حملہ ، 16 ہزار کروڑ کیلئے خرچ کردئے 21 ہزار کروڑ

کانگریس لیڈر نے کہا کہ نوٹ بندی پوری طرح ناکام ثابت ہوگئی ہے۔ یہ ایک بڑی 'تباہی تھی جس میں 104 افراد نے اپنی زندگی گنوادی اور 'بدعنوان لوگوں ' نے اس کی آڑ میں’ بڑی رقم ‘بنائی۔ انہوں نے کہا کہ سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے نوٹ بندی کی وجہ سے معیشت کودو فیصدکے نقصان کا اندیشہ ظاہر کیا تھا جو پوری طرح صحیح ثابت ہوا ۔ نوٹ بندی کے نتیجے میں معیشت کو بہت بڑا نقصان ہوا ہے۔

مسٹرسرجے والا نے کہا کہ مودی کی پول ایک مرتبہ پھر کھل گئی ہے۔ وزیر اعظم نے حال ہی میں کہا تھا کہ نوٹ بندی کے بعد تین لاکھ کروڑ روپے کی بلیک منی ملی ہے۔ ریزرو بینک نے کہا ہے کہ 30 جون تک اس کے پاس نوٹ بندی والے 15.28 لاکھ کروڑ روپے کے نوٹ یعنی سرکولیشن سے ہٹائے گئے کل نوٹوں کا 99 فیصد حصہ جمع ہوگیا تھا۔

Loading...

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بلیک منی اورجعلی نوٹوں کی گردش پر پابندی عائد کرنے کے مقصد سے نوٹ بندی کا اعلان کرنے کے بعد 30 جون، 2017 تک ا س کے پاس سرکولیشن سے ہٹائے گئے1000 اور 500 روپئے کے 15.44لاکھ کروڑ روپے کے نوٹوں کا 99 فیصدحصہ جمع ہوگیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق نوٹ بندی کے بعد، 1،000 روپے کے تقریبا 8.9 کروڑ نوٹ یعنی 8،900 کروڑ روپے واپس نہیں آئے ہیں۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز