جموں وکشمیر میں پنچایتی انتخابات کا اعلان، محبوبہ مفتی نے کہا : عوام نے ہمیشہ گولیوں پر ووٹ پرچیوں کو دی ترجیح

جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ریاست میں پنچایتی انتخاب کے انعقاد کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاستی عوام نے ہمیشہ گولیوں کے بجائے ووٹ پرچیوں کو ترجیح دی ہے۔

Dec 26, 2017 10:52 PM IST | Updated on: Dec 26, 2017 10:52 PM IST

سری نگر: جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ریاست میں پنچایتی انتخاب کے انعقاد کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاستی عوام نے ہمیشہ گولیوں کے بجائے ووٹ پرچیوں کو ترجیح دی ہے۔محترمہ مفتی نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’مجھے یہ اعلان کرتے ہوئے خوشی ہورہی ہے کہ جموں وکشمیر میں پنچایتی انتخابات 15 فروری 2018 سے شروع ہوں گے۔ریاست کے لوگوں نے ہمیشہ گولیوں کے بجائے ووٹ پرچیوں کو ترجیح دی ہے اور آگے بھی دیتے رہیں گے‘۔

وزیر اعلیٰ کا یہ ٹویٹ ان کی گزشتہ شام ریاستی گورنر این این ووہرا کے ساتھ ملاقات کے بعد سامنے آیا ہے۔ گزشتہ رات جاری ہونے والے ایک سرکاری پریس بیان میں کہا گیا’محترمہ مفتی نے قریب آدھے گھنٹے تک گورنر ووہرا سے میٹنگ کی۔ اس دوران وزیرا علیٰ نے گورنر کو کچھ دن پہلے کابینہ کی طرف سے لئے گئے فیصلوں اور 15فروری 2018ء سے پنچایتی انتخابات منعقد کرانے کے حکومت کے فیصلے سے آگاہ کیا‘۔ ریاست میں پنچایتی انتخابات سال 2011 ء میں 37 برس کے طویل عرصے کے بعد منعقد کئے گئے تھے۔ عمر عبداللہ کی قیادت والی سابق نیشنل کانفرنس کانگریس مخلوط حکومت میں ہونے والے ان پنچایتی انتخابات کے دوران 4098 سرپنچ اور 29 ہزار 402 پنچ منتخب قرار پائے تھے۔

جموں وکشمیر میں پنچایتی انتخابات کا اعلان، محبوبہ مفتی نے کہا : عوام نے ہمیشہ گولیوں پر ووٹ پرچیوں کو دی ترجیح

فائل فوٹو

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز