مسلم پنچایت کا قابل تعریف فیصلہ ، دولہے کے ساتھ جائیں گے صرف پانچ باراتی ، 151 روپے میں ہوگی شادی

Oct 29, 2017 04:27 PM IST | Updated on: Oct 29, 2017 04:49 PM IST

بجنور : پنچایتوں کے فیصلہ پر تنازع ہوتے ہوئے تو آپ نے اکثر دیکھا ہوگا ، لیکن اترپردیش کے بجنور میں مسلم پنچایت نے ایک ایسا فیصلہ کیا ہے ، جس کی ہر طرف ستائش کی جارہی ہے اور ہر کوئی پنچایت کے فیصلہ کی تعریف میں رطب اللسان نظر آرہا ہے ۔ جہاں ایک طرف شادی بیاہ میں اخراجات کو لے کر لڑکی کے اہل خانہ بیٹی کی پیدائش سے ہی پریشان نظر آتے ہیں اور پائی پائی جوڑنا شروع کردیتے ہیں ، وہیں مسلم پنچایت نے جو فیصلہ کیا ہے ، اس سے لڑکی کے والدین کو کافی راحت ملے گی ۔

بجنور کے بیگوال میں منعقد ہوئی مسلم سماج کی پنچایت نے فیصلہ کیا ہے کہ ہے اب شادیوں میں دولہے کے ساتھ صرف پانچ باراتی آئیں گے اور شادی بیاہ کی پوری رسم محض ایک سو اکیاون روپے میں ادا کی جائے گی ۔ علاوہ ازیں غم کے موقع پر اچھے پکوانوں پر بھی پابندی لگادی ہے۔

مسلم پنچایت کا قابل تعریف فیصلہ ، دولہے کے ساتھ جائیں گے صرف پانچ باراتی ، 151 روپے میں ہوگی شادی

علامتی تصویر

بیگوال کے گاوں محمد پور منڈاولی میں واقع مدرسہ ضیا الاسلام میں ہفتہ کو جھوجھا ، ادریسی ، سلمانی اور دھوبی برادری کے لوگوں کی ایک پنچایت منعقد کی گئی ، جس میں شادی بیاہ میں ہونے والی فضول خرچیوں اور اس سے لڑکی اہل خانہ کو لاحق ہونے والی پریشانیوں پر غور و خوض کیا گیا ۔ پنچایت میں شال ٹیچر محمد سلیم نے کہا کہ شادیوں میں فضول خرچی پر پابندی کیلئے سبھی کو آگے آنا چاہئے ۔ طویل غور و خوض کے بعد پنچایت نے فیصلہ کیا کہ اب بارات میں دولہے کے ساتھ صرف پانچ باراتی جائیں گے ، ڈی جے ، بینڈ اور ویڈیو گرافی پر پوری طرح سے پابندی لگائی جانی چاہئے ۔

پنچایت نے یہ بھی فیصلہ سنایا کہ شادی کے دوران پانچ ذمہ دار افراد کی موجودگی میں ایک سو اکیاون روپے میں رشتے کی سبھی رسمیں پوری کی جائیں گی ۔ اس درمیان لڑکا اور لڑکی کے اہل خانہ میں کوئی لین دین نہیں ہوگا ۔ وہیں لڑکی کے اہل خانہ نکاح کی رسم پوری ہونے کے بعد ہی نمائش کئے بغیر صرف جوڑے کو ضرورت کا سامان دے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز