سات سال سے گرمیت رام رحیم کے ڈیرہ میں یرغمال ہے ایک بیٹی

سادھوی آبروریزی کیس میں جیل کے سلاخوں کے پیچھے قید سرسا ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم سے متعلق ہر دن کوئی نہ کوئی نیا انکشاف سامنے آرہا ہے ۔

Sep 04, 2017 01:12 PM IST | Updated on: Sep 04, 2017 01:12 PM IST

چنڈی گڑھ : سادھوی آبروریزی کیس میں جیل کے سلاخوں کے پیچھے قید سرسا ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم سے متعلق ہر دن کوئی نہ کوئی نیا انکشاف سامنے آرہا ہے ۔ اب ایک کنبہ نے الزام لگایا ہے کہ سات برسوں سے اس کی بیٹی کو ڈیرے میں یرغمال بناکر رکھا ہوا۔ چرخی دادری گاوں تیوالا کے ایک کنبہ نے اپنی بیٹی رینو عرف شردھا کو ڈیرہ کے ذریعہ یرغمال بنائے جانے کا یہ الزام لگایا ہے۔

بتایا جارہا ہے کہ والدین سے محروم یہ بچی آشرم جانے کے بعد آج تک تیوالا گاوں واپس نہیں آئی ہے ۔ 2006 میں شردھا اپنے بھائی سنجے عرف جے جیت سمیت ڈیرہ سچا سودا میں پڑھنے کیلئے گئی تھی ۔ لواحقین کی کافی کوششوں اور جد وجہد کے بعد ڈیرہ سچا سود نے جے جیت کو تو انہیں سونپ دیا مگر شردھا کا کوئی اتہ پتہ نہیں ہے۔ لواحقین نے الزام لگایا ہے کہ ان کی بیٹی کو ڈیرہ انتظامیہ کے ذریعہ یرغمال بنالیا گیا ہے ۔ اب انہیں یہ بھی نہیں معلوم کے شردھا زندہ بھی ہے یا نہیں ۔

سات سال سے گرمیت رام رحیم کے ڈیرہ میں یرغمال ہے ایک بیٹی

لواحقین کے مطابق ڈیرہ انتظامیہ نے کہا تھا کہ بچوں کو مفت تعلیم دی جائے گی اور مفت میں ان کی پرورش بھی کی جائے گی ۔ ڈیرہ کے لوگوں پر اعتماد کرنے کے خالہ راجیش دیوی نے رینو اور سنجے کو سرسا ڈیرہ بھیج دیا ، کچھ دن بعد ہی بیٹی رینو عرف شردھا کو اہل خانہ سے نہیں ملنے دیا گیا۔

تاہم سنجے کبھی کبھی خفیہ طور پر اہل خانہ سے ملنے کیلئے آتا رہا ۔ سات سال سے اہل خانہ کے لوگ شردھا سے ملنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ کسی طرح اہل خانہ جے جیت کو گھر لانے میں کامیاب رہے ، لیکن شردھا کے بارے میں کوئی معلومات نہیں ہے۔ کچھ سال پہلے سچا سودا ڈیرہ سے شاع سچی شکشا میگزین میں شردھا کی تصویر دیکھ کرانہیں معلوم ہوا کہ ان کی بیٹی کی شکل کیسی ہے اور وہ زندہ ہے ۔ لیکن اب انہیں کوئی معلومات نہیں ہے کہ وہ کہاں ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز