سابق مرکزی وزیر ای احمد کا انتقال ، پارلیمنٹ میں صدرجمہوریہ کے خطاب کے دوران پڑا تھا دل کا دورہ

نئی دہلی۔ سابق مرکزی وزیر اور انڈین یونین مسلم لیگ کے صدر ای احمد کو دل کا دورہ پڑنے کے بعد ان کی حالت نازک ہے اور انہیں وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے۔

Jan 31, 2017 07:42 PM IST | Updated on: Feb 01, 2017 08:17 AM IST

نئی دہلی۔  سابق مرکزی وزیر اور انڈین یونین مسلم لیگ کے صدر ای احمد کا دل کا دورہ پڑنے کے بعد آج انتقال ہوگیا ۔ وہ اناسی سال کے تھے  ۔ ای احمد گزشتہ روز  پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس میں صدر جمہوریہ کے خطاب کے دوران ہی اچانک اپنی نشست سے بے ہوش ہوکر گر پڑے تھے ، جس کے بعد انہیں فورا ایمبولینس سے ڈاکٹروں کی نگرانی میں رام منوہر لوہیا اسپتال لے جایا گیا تھا ۔ ڈاکٹروں نے بتایا تھا  احمد کو دل کا دورہ پڑا ہے اور ان کی حالت کافی نازک ہے اور انہیں انتہائی نگہداشت یونٹ (آئی سی یو) میں وینٹی لیٹر پر رکھا گیاہے ۔ رات میں سوا دو بجے انہوں نے آخری سانسیں لیں ۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے سابق مرکزی وزیر کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کی تھی جبکہ کانگریس نائب صدر راہل گاندھی، مرکزی وزیر مہیش شرما اور جتیندر سنگھ نے اسپتال جا کر ان کی عیادت کی  تھی ۔ کیرالہ کے دیگر رہنما اور ارکان پارلیمنٹ بھی اسپتال پہنچے تھے ۔ کیرالہ میں کنور کے رہنے والے مسٹر احمد سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ کے دور اقتدار میں خارجی امور اور فروغ انسانی وسائل کی وزارتوں میں وزیر مملکت رہے تھے ۔ وہ پہلی بار 1991 میں لوک سبھا کے لئے منتخب کئے گئے اور مئی 2014 میں کیرالہ کی منپورم سیٹ سے ساتویں بار رکن پارلیمنٹ منتخب ہوئے۔ ان کی اہلیہ کا پہلے ہی انتقال ہو چکا ہے۔ ان کے خاندان میں دو بیٹے اور ایک بیٹی ہے۔

سابق مرکزی وزیر ای احمد کا انتقال ، پارلیمنٹ میں صدرجمہوریہ کے خطاب کے دوران پڑا تھا دل کا دورہ

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز