مانسون اجلاس: وزیر اعظم مودی بولے، جی ایس ٹی کا دوسرا نام 'گروئنگ اسٹرانگر ٹوگیدر

Jul 17, 2017 11:45 AM IST | Updated on: Jul 17, 2017 11:45 AM IST

نئی دہلی۔ آج سے مانسون اجلاس شروع ہو گیا ہے۔ پارلیمنٹ پہنچ کر وزیر اعظم نریندر مودی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جی ایس ٹی نافذ ہونے سے پارلیمنٹ کا یہ سیشن نئی امنگ سے بھرا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی ایک ساتھ کام کرنے کا دوسرا نام ہے. انہوں نے جی ایس ٹی کا نیا نام بتاتے ہوئے اسے 'گروئنگ اسٹرانگر ٹوگیدر' کہا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مودی نے کہا، اس وقت لوگوں کا دھیان مانسون سیشن پر کئی اہم معاملات پر بات چیت کو لے کر رہے گا۔ انہوں نے اس سیشن کے آغاز میں کسانوں کو سلام کرتے ہوئے کہا، وہ اس موسم میں سخت محنت کر ہم وطنوں کے لئے کھانے کا انتظام کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے آئندہ موسم کو لے کر کہا، 'مجھے یقین ہے کہ تمام سیاسی جماعتیں، ایم پی قومی مفاد میں فیصلے کریں گے اور ہر خیال اور نظام میں ویلیو ایڈیشن کریں گے۔'

میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا، 'آج سے مانسون اجلاس شروع ہو رہا ہے۔ جس طرح گرمی کے بعد پہلی بارش مٹی میں نئی ​​مہک لاتی ہے، ویسے ہی جی ایس ٹی کے بعد مکمل سیشن نئی امنگ سے بھرا جائے گا۔ جی ایس ٹی سے ثابت ہو چکا ہے کہ ملک کی تمام پارٹیاں اور حکومتیں قومی مفاد میں کام کرتی ہیں۔ اس کا نیا نام گروئنگ اسٹرانگر ٹوگیدر بھی ہوگا۔

مانسون اجلاس: وزیر اعظم مودی بولے، جی ایس ٹی کا دوسرا نام 'گروئنگ اسٹرانگر ٹوگیدر

اس کے بعد انہوں نے کہا، مانسون اجلاس کے درمیان ہی 9 تاریخ کو اگست انقلاب کے 75 سال پورے ہو رہے ہیں۔ پورے ملک کی توجہ اس سیشن پر ہو گی۔ وہیں، اپوزیشن پارٹیاں اس میں کئی مسائل کو لے کر حکومت کو گھیرنے کے لئے تیار ہیں۔ اسے دیکھتے ہوئے سیشن کے کافی ہنگامہ خیز ہونے کے آثار ہیں۔ حالانکہ لوک سبھا کی کارروائی آسان طریقے سے چلانے کے لئے لوک سبھا اسپیکر نے ایک کل جماعتی میٹنگ کی۔ لیکن کانگریس نے کچھ مسائل پر حکومت کو گھیرنے کا اشارہ دیا۔

پارٹی لیڈر غلام نبی آزاد نے چین، کشمیر، کسانوں کی حالت، گئوركشكوں کی جانب سے کئے جا رہے تشدد جیسے کئی مسائل کو لوک سبھا میں اٹھانے کی بات کی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز