پارلیمنٹ سرمائی اجلاس : شرد یادو اورعلی انور کی رکنیت منسوخ ہونے پر راجیہ سبھا میں زبردست ہنگامہ

سرمائی اجلاس کے پہلے دن راجیہ سبھ ا میں جنتا دل (یو)کے باغی لیڈر شرد یادو کی رکنیت منسوخ ہونے کے معاملے میں آج وقفہ صفر میں زبردست ہنگامہ ہوا جس سے ایوان کی کارروائی 12بجے تک کےلئے ملتوی کردی گئی۔

Dec 15, 2017 01:30 PM IST | Updated on: Dec 15, 2017 01:30 PM IST

نئی دہلی: سرمائی اجلاس کے پہلے دن راجیہ سبھ ا میں جنتا دل (یو)کے باغی لیڈر شرد یادو کی رکنیت منسوخ ہونے کے معاملے میں آج وقفہ صفر میں زبردست ہنگامہ ہوا جس سے ایوان کی کارروائی 12بجے تک کےلئے ملتوی کردی گئی۔ اسپیکر ایم وینکیا نائیڈو نے سابق آنجہانی اراکین کو خراج عقیدت دینے اور باقاعدہ کام کاج نمٹانے کے بعد ایوان کو مطلع کیا کہ جنتا دل یو کے ایوان میں لیڈر رام چندر پرساد کی عرضی کے سلسلے میں دونوں فریقوں کی دلیل سننے کے بعد مسٹر شرد یادو اور مسٹر علی انور کی رکنیت ایوان کے طریقے کار اور ضابطوں کے تحت راجیہ سبھا سے منسوخ کردی گئی۔

ایوان میں اپوزیشن کے لیڈر غلام بنی آزاد اور سماجوادی پارٹی کے لیڈر نریش اگروال نے اس منسوخی پر اعتراض ظاہر کیا اور سوالات اٹھائے۔مسٹر اگروال نے سسٹم کا سوال اٹھایا ، جسے مسٹر نائیڈو نے نامنظور کردیا۔اسی دوران اپوزیشن کے کئی اراکین نے ہنگامہ شروع کردیا۔ مسٹر آزاد اور مسٹر اگروال نے کہا کہ وہ مسٹر نائیڈو کے فیصلے کو چیلنج نہیں دے رہے ہیں ، لیکن انہیں اپنی بات تو کہنے کی اجازت دی جائے،تب مسٹر نائیڈو نے مسٹر اگروال کو بولنے کی اجازت دی۔

پارلیمنٹ سرمائی اجلاس : شرد یادو اورعلی انور کی رکنیت منسوخ ہونے پر راجیہ سبھا میں زبردست ہنگامہ

شرد یادو: فائل فوٹو

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز