دہلی میٹرو کرایہ میں اضافہ، مسافروں میں زبردست ناراضگی، کل کے لئے کی یہ پلاننگ

Oct 10, 2017 07:13 PM IST | Updated on: Oct 10, 2017 07:13 PM IST

نئی دہلی۔ دہلی حکومت ، سیاسی جماعتوں اور مزدوروں و طلبہ تنظیموں کی مخالفت کو نظر انداز کرتے ہوئے دہلی میٹرو نے آج سے اضافہ شدہ کرایہ نافذ کردیا جس کی وجہ سے مسافروں میں زبردست ناراضگی ہے۔ نئے کرائے کی فہرست کے مطابق کم سے کم دوری یعنی دو کلومیٹر تک کرایہ دس روپے تک ہی رہے گا لیکن دو سے پانچ کلومیٹر کے لئے اب مسافروں کو پندرہ کے بجائے بیس روپے، پانچ سے بارہ کلومیٹر کے لئے بیس کی جگہ تیس روپے ، بارہ سے اکیس کلومیٹر کے لئے تیس کی جگہ چالیس روپے، اکیس سے بتیس کلومیٹر کے لئے چالیس کی جگہ پچاس روپے اور بتیس کلومیٹر سے زیادہ کے لئے پچاس کی جگہ ساٹھ روپے ادا کرنے ہوں گے۔

میٹر و کے مطابق اسمارٹ کارڈ، چھٹیوں کے دن اور کم بھیڑ والے اوقات میں سفر کرنے والوں کو ملنے والی رعایت پہلے کی طرح برقرار رہیں گی ۔ دہلی میٹرو نے آٹھ برس کے بعد گذشتہ مئی میں ہی کرایوں میں 66فیصد تک کا اضافہ کردیا تھا۔ دہلی اسمبلی نے میٹرو کرایہ اضافہ کے خلاف کل ایک تجویز منظور کی تھی۔ ریاست میں حکمراں عام آدمی پارٹی کرایہ میں اضافہ کی مخالفت کررہی ہے۔ اس سال یہ دوسرا موقع ہے جب میٹرو کے کرایہ میں اضافہ کیا جارہا ہے۔ اس سے پہلے مئی میں اس میں اضافہ کیا گیا تھا۔ مرکزی حکومت نے اس معاملے میں مداخلت کرنے سے انکار کردیا ہے۔ اس معاملے پر مرکز اور دہلی حکومت کے درمیان ٹکراو کی صورت بن گئی تھی۔ دہلی کانگریس نے میٹرو کرایہ میں اضافہ کے لئے دہلی حکومت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ اس کے خلاف تحریک چلائی جائے گی۔

دہلی میٹرو کرایہ میں اضافہ، مسافروں میں زبردست ناراضگی، کل کے لئے کی یہ پلاننگ

عام لوگوں میں میٹرو کے کرایہ میں اضافہ کی وجہ سے کافی ناراضگی ہے اور ان کا کہنا ہے کہ اس سے دہلی کی لائف لائن بن چکی میٹرو غریب لوگوں کی دسترس سے باہر ہوجائے گی : فائل فوٹو۔

عام لوگوں میں میٹرو کے کرایہ میں اضافہ کی وجہ سے کافی ناراضگی ہے اور ان کا کہنا ہے کہ اس سے دہلی کی لائف لائن بن چکی میٹرو غریب لوگوں کی دسترس سے باہر ہوجائے گی ۔ ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ مڈل کلاس کے لوگوں کے پاس میٹرو جیسا معتبر دوسرا ذریعہ نہیں ہے لیکن اب انہیں اس اعتبار کی کافی زیادہ قیمت ادا کرنی پڑے گی۔ کچھ مسافروں کا یہ بھی کہنا ہے کہ اگر کرایہ بڑھایا گیا ہے تو اس کے حساب سے سہولت بھی بڑھانی ہوگی۔ دہلی میٹرو پسنجرس یونین نے کرایہ بڑھانے کی مخالفت کرتے ہوئے مسافروں سے کل مخالفت کے طور پر اس میں سفر نہیں کرنے کی اپیل کی ہے۔

پسنجر یونین کے کارکنوں نے پچاس مصروف ترین میٹرو اسٹیشنوں پر پرچے بھی تقسیم کئے اور کرایہ میں اضافہ کو عوام دشمن قرار دیتے ہوئے لوگوں سے اس کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی ہے۔ پسنجر یونین نے کئی سماجی تنظیموں، ٹریڈ یونینوں اور عوامی تنظیموں سے بھی رابطہ کرکے کل بائیکاٹ میں شامل ہونے کے لئے کہا ہے۔ کانگریس کی اسٹوڈنٹس ونگ این ایس یو آئی نے بھی وشوودیالیہ میٹرو اسٹیشن پر کرایہ میں اضافہ کے خلاف مظاہرہ کیا ۔ اے بی وی پی نے بھی کرایہ میں اضافہ کے خلاف مظاہرہ کیا ہے۔ دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے الزام لگایا کہ میٹرو کا کرایہ بڑھانے کے پیچھے مرکز کی گہری سازش ہے۔ وہ اس کی آڑ میں پرائیوٹ ٹیکسی آپریٹروں کو فائدہ پہنچانا چاہتی ہے۔ اگر معاملہ اس سے سنبھل نہیں پا رہا ہے تو میٹرو دہلی حکومت کو دے دے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز