ہماچل پردیش اسمبلی انتخابات: کانگریس پارٹی 'لافنگ کلب' بن گئی ہے: نریندر مودی

كانگڑا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ہماچل پردیش اسمبلی انتخابات میں ویر بھدر سنگھ حکومت کا تختہ الٹنےکی ووٹروں سے اپیل کرتے ہوئے آج کہا کہ جنہوں نے ریاست کو لوٹا ہے انہیں روانہ کرنے کا وقت آ گیا ہے۔

Nov 02, 2017 02:07 PM IST | Updated on: Nov 02, 2017 02:07 PM IST

كانگڑا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ہماچل پردیش اسمبلی انتخابات میں ویر بھدر سنگھ حکومت کا تختہ الٹنےکی ووٹروں سے اپیل کرتے ہوئے آج کہا کہ جنہوں نے ریاست کو لوٹا ہے انہیں روانہ کرنے کا وقت آ گیا ہے۔ ہماچل اسمبلی کے نو نومبر کو ہونے والے پولنگ کے لئے آج كانگڑا میں اپنی پہلی انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر مودی

نے  کانگریس کے منشور میں بدعنوانی کو برداشت نہیں کرنے پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ جس کا وزیر اعلی خود بدعنوانی کے الزام میں ضمانت پر ہے وہ اقتدار میں آنے پر بدعنوانی کو برداشت نہیں کرنے کی بات کر رہی ہے۔

ہماچل پردیش اسمبلی انتخابات: کانگریس پارٹی 'لافنگ کلب' بن گئی ہے: نریندر مودی

انہوں نے کہا، "مجھے لگتا ہے کہ کانگریس پارٹی ’لافنگ کلب‘بن گئی ہے۔"68 رکنی ریاست اسمبلی میں کانگرا ضلع بہت اہم ہے اور اس میں 15 اسمبلی کی نشستیں ہیں۔ 2012 میں ہونے والے انتخابات میں،کانگریس نے یہاں سے 10 نشستیں جیتی تھیں۔ تین بی جے پی اور دو دیگر کے کھاتے میں گئی تھیں۔بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کے وزیر اعلی کے امیدوار پریم كمار دھومل ضلع کی سجان پور سیٹ سے انتخابی میدان میں ہیں۔

مسٹر مودی نے کہا کہ کانگریس نے پانچ راکشسوں کی پرورش کی ہے ان میں کان کنی مافیا، جنگل مافیا، ڈرگ مافیا، ٹینڈر مافیا اور دانو ٹرانسفر مافیا شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان پانچوں راکشسوں کی روح پولنگ بوتھ کے بٹن میں ہیں اور نو نومبر کو ای وی ایم کا بٹن دبا کر اس کا خاتمہ کریں اوربھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو بھاری اکثریت سے فتحیاب کریں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز