اودھم پور میں پی ایم مودی: کشمیر کے لوگ 'ٹیررزم' اور 'ٹورزم' میں سے ایک راستہ چن لیں

Apr 02, 2017 07:17 PM IST | Updated on: Apr 02, 2017 07:17 PM IST

اودھم پور۔ اتوار کو جموں۔ سرینگر نیشنل ہائی وے پر واقع ملک کی سب سے طویل چینانی-ناشری سرنگ کا افتتاح کرنے کے بعد پی ایم نریندر مودی نے اودھم پور میں ایک ریلی سے خطاب کیا۔ مودی نے کہا کہ یہ صرف ایک سرنگ نہیں ہے بلکہ جموں و کشمیر کے لئے ترقی کی چھلانگ ہے۔ پی ایم نے کشمیر کے نوجوانوں سے کہا کہ اب ان کے پاس دو راستے ہیں ٹیررزم یا ٹورازم۔

مودی نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس سرنگ کی تعمیر میں جموں و کشمیر کے نوجوانوں کا پسینہ لگا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ نوجوان پتھر کاٹ کر سرنگ بنا رہے ہیں، کچھ پتھر پھینک رہے ہیں۔ مودی نے کہا کہ کشمیر کے لوگوں کو پتھر کی طاقت کو سمجھنا ہوگا۔ انہوں نے اس سرنگ کو کشمیر کا مستقبل لائن بتایا۔

اودھم پور میں پی ایم مودی: کشمیر کے لوگ 'ٹیررزم' اور 'ٹورزم' میں سے ایک راستہ چن لیں

مودی نے کہا کہ جموں وکشمیر کے لوگ ٹورزم کی طاقت کو پہچانیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وادی کے نوجوانوں کے پاس اب دو راستے ہیں، خون کے کھیل میں کسی کا بھلا نہیں ہے۔ مودی نے واضح کہا کہ کشمیر کے لوگ ٹیررزم اور ٹورزم کے راستے میں سے ایک کو منتخب کر لیں۔ مودی نے اپنے خطاب کے دوران سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کا بھی ذکر کیا۔ انہوں نے پاکستان پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ سرحد پار بیٹھے لوگ خود کو ہی نہیں سنبھال پا رہے ہیں۔ مودی نے اس ریلی کے آغاز میں ہی سب سے موبائل فون نکلوا کر ان کی فلیش لائٹ آن کروائی اور 'بھارت ماتا کی جے' بولنے کے لئے کہا۔ انہوں نے نتن گڈکری اور سرنگ بنانے والی ٹیم کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ سرنگ انتہائی جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کر کے بنائی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز