وزیر اعظم سمیت مختلف سیاسی جماعتوں نے تین طلاق پر عدالتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا

Aug 22, 2017 05:42 PM IST | Updated on: Aug 22, 2017 05:42 PM IST

نئی دہلی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے سپریم کورٹ کے تین طلاق سے متعلق فیصلے کو تاریخی قرار دیا ہے۔ مسٹر مودی نے اس فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ یہ مسلم خواتین کو مساوات کا حق دے گا اور یہ خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے ایک مضبوط قدم بھی ثابت ہو گا۔ چیف جسٹس جے ایس کیہر کی صدارت والی پانچ رکنی بنچ نے تین طلاق کی روایت پر چھ ماہ کے لئے روک لگاتے ہوئے مرکزی حکومت کو اس سے متعلق قانون بنانے کے لئے کہا ہے۔ پانچ رکنی بینچ نے 2-3سے اس پر فیصلہ اپنا سنایا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ مسٹرمودی نے یوم آزادی کے موقع پر قوم سے خطاب کرتے ہوئے لال قلعہ کی فصیل پر پراعتماد لہجے میں کہا تھا کہ تین طلاق کے معاملے پر اپنے حق کی لڑائی لڑنے والی خواتین یقینا کامیاب ہوں گی۔ انہوں نے کہا، "میں خاص طور پر ملک کی ان بہنوں کو مبارکباد پیش کرنا چاہتا ہوں جو تین طلاق کی روایت کے خلاف لڑائی لڑرہی ہیں ۔ تین طلاق کی وجہ سے متعدد خواتین بدقسمتی والی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ ان کے لئے کوئی پناہ نہیں ہے۔ ہماری یہ بہنیں متاثرخواتین کے لئے نئی مثال پیش کر رہی ہیں۔ "

وزیر اعظم سمیت مختلف سیاسی جماعتوں نے تین طلاق پر عدالتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا

علامتی تصویر

وزیر اعظم نے کہا کہ خواتین کی اس تحریک نے ملک کے دانشور طبقے کو ہلا دیا، ملک کی میڈیا نے بھی ان کی مدد کی، ملک بھر میں تین طلاق کے خلاف ماحول پیدا کردیا۔ انہوں نے کہا، "یہ بہنیں جو اس تحریک کو چلا رہی ہیں، جو تین طلاق کے خلاف لڑ رہی ہیں، میں انہیں دل سے مبارکباد پیش کرتا ہوں اور میں یقین کرتا ہوں کہ ماؤں اور بہنوں کے حقوق کے لئے ان کی لڑائی میں ہندوستان ان کی مکمل طور پر مدد کرے گا۔ خواتین کو بااختیار بنانے کے اس اہم قدم میں خواتین یقیناکامیاب ہوں گی۔ میں اس سلسلے میں پراعتماد ہوں ۔ "

امت شاہ نے فیصلہ کا کیا خیر مقدم

وہیں، بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر امت شاہ نے تین طلاق پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ یہ مسلم خواتین کو برابری کے حقوق فراہم کرنے اور ان کے بنیادی آئینی حق کی جیت ہے۔ آج ایک بیان میں مسٹر شاہ نے کہا کہ تین طلاق سے متعلق یہ فیصلہ تاریخی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس فیصلے نے مسلم خواتین کے لئے خودداری اور مساوات کا نیا دور شروع کیا ہے۔ انہوں نے مسلم خواتین کے موقف کو منصفانہ اور غیرجانبدارانہ طریقے سے سپریم کورٹ میں پیش کرنے کے لئے وزیرا عظم نریندر مودی اور ان کی حکومت کی ستائش کی۔

بی جے پی صدر نے کہا کہ اس فیصلہ سے کسی کی شکست یا فتح نہیں ہوئی ہے۔ یہ مسلم خواتین کے برابری کے حقوق اور بنیادی آئینی حقوق کی جیت ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس فیصلے کا پرزور خیرمقدم اس لئے کرتے ہیں کیوں کہ جو مسلم خواتین اپنے حق کی لڑائی لڑ

رہی تھیں عدالت عظمی نے بھی ان کی قدر کی ہے وہ ان خواتین کو بھی مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ بی جے پی مسلم خواتین کو ملے اس انصاف کا استقبال کرتی ہےاوروہ اسے 'نیو انڈیا' کی جانب بڑھتے قدم کے طور پر بھی دیکھتے ہیں۔

کانگریس نے تین طلاق پر فیصلہ کا خیر مقدم کیا

وہیں،  کانگریس نے تین طلاق پر سپریم کورٹ کے فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے آج کہا کہ یہ ترقی پسندانہ قدم ہے۔ کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سرجے والا نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ پارٹی تین طلاق پر عدالت کے فیصلے کا خیرمقدم کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ترقی پسند انہ قدم ہے۔ اس سے ہندستان میں مسلمان کمیونٹی میں خواتین کو برابری کا حق حاصل ہوگا۔

سی پی ایم نے عدالتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا

مارکسی کمیونسٹ پارٹی نے تین طلاق معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا آج خیر مقدم کیا ہے۔ پولٹ بیورو نے آج یہاں جاری بیان میں کہا کہ پارٹی سپریم کورٹ کے اس اکثریتی فیصلے کا خیر مقدم کرتی ہے۔ ابھی عدالت کے فیصلے کی نقل انہیں نہیں ملی ہے ۔ فیصلے کی نقل ملنے پر وہ پانچ رکنی بنچ کے ججوں کی طرف معاملے کے حق اور مخالفت میں دئے گئے بیان کا جائزہ لینے کے بعداس فیصلے پر تفصیلی تبصرہ کرے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز