جب یوم جمہوریہ کے مہمان خصوصی کی کئی باتیں سمجھ ہی نہیں پائے وزیر اعظم مودی

Jan 26, 2017 06:52 PM IST | Updated on: Jan 26, 2017 06:52 PM IST

نئی دہلی : یوم جمہوریہ کی تقریب کے مہمان خصوصی محمد بن زائد النهيان اور وزیر اعظم مودی کے درمیان مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران بدھ کو عجیب صورت حال پیدا ہو گئی۔دراصل نئی دہلی میں مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران ٹریفک جام میں پھنسے ہوئے ہونے کی وجہ سے مترجم طے وقت پر نہیں پہنچ سکا، جس کی وجہ سے پریس کانفرنس کے وقت محمد بن زائد کی زیادہ تر باتیں وزیر اعظم مودی سمجھ ہی نہیں پائے۔

محمد بن زائد نے پریس کانفرنس میں السلام علیکم سے اپنا خطاب شروع کیا، لیکن اس کے بعد وہ سمجھ ہی نہیں پائے کہ آگے کیا بولیں۔ چند سیکنڈ کی خاموشی کے بعد محمد بن زائد تقریبا تین منٹ تک عربی میں ہی بولتے رہے۔

جب یوم جمہوریہ کے مہمان خصوصی کی کئی باتیں سمجھ ہی نہیں پائے وزیر اعظم مودی

محمد بن زائد کی مشکلیں حیدرآباد ہاؤس میں بھی جاکر ختم نہیں ہوئیں۔ وہاں بھی مترجم موجود نہیں ہونے کی وجہ سے دونوں لیڈروں نے لکھی ہوئی تقریر پڑھی۔ بعد میں اس کے پوائنٹس کو میڈیا کے ساتھ شیئر کیا گیا۔

اس دوران ہندوستان اور متحدہ عرب امارات نے باہمی تعلقات کو رفتار دینے کے لئے مجموعی طور اسٹریٹجک شراکت داری معاہدہ کے علاوہ دفاع، سیکورٹی، تجارت اور توانائی جیسے اہم علاقوں میں 14 معاہدوں پر دستخط کئے۔ اس موقع پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ یہ تعاون تعلقات میں نئی ​​پرواز کا اشارہ ہے۔

یو اے ای نے 75 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری فنڈ کا جو وعدہ کیا ہے ، وہ ان 14 معاہدوں میں شامل نہیں ہے۔ ہندوستان کو اس سرمایہ کاری فنڈ معاہدہ کی امید تھی۔ ان 14 معاہدوں پر مودی اور محمد بن زائد کے درمیان بات چیت کے بعد دستخط ہوئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز