پی ایم مودی تین ممالک کے دورے پر روانہ، وائٹ ہاؤس میں ٹرمپ کے ساتھ کریں گے ڈنر

Jun 24, 2017 12:06 PM IST | Updated on: Jun 24, 2017 12:13 PM IST

نئی دہلی۔ وزیر اعظم نریندر مودی اپنے تین ممالک کے دورے پر روانہ ہو چکے ہیں۔ وہ 26 جون کو امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے پہلی بار ملیں گے۔ اس کے ساتھ ہی پی ایم مودی پہلے ورلڈ لیڈر ہوں گے جو وائٹ ہاؤس میں ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ڈنر کریں گے۔ اپنے دورہ سے پہلے پی ایم مودی نے کہا کہ اس دورہ کا مقصد دو طرفہ شراکت داری کے لئے ایک ویژن تیار کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مضبوط رشتوں کو اور مضبوط بنانے کی سمت میں بات چیت کریں گے۔

وزیر اعظم امریکہ کے علاوہ ہالینڈ اور پرتگال کا دورہ بھی کریں گے۔ ان کے دورے سے پہلے امریکہ میں بھارت کے سفیر نوتیج سرنا نے کہا کہ پی ایم مودی اور صدر ٹرمپ پہلی بار آمنے سامنے ہوں گے، اس لحاظ سے یہ ایک اہم دورہ ہے۔ سرنا نے بتایا کہ اس سے پہلے مودی اور ٹرمپ کے درمیان فون پر کم از کم تین بار بات ہو چکی ہے جو کہ کافی اچھی رہی ہے۔ انہوں نے کہا، "ہمیں امید ہے کہ اس ملاقات کے دوران دونوں رہنماؤں کو ایک دوسرے کو جاننے اور بھارت-امریکہ دو طرفہ تعلقات کی مختلف جہتوں پر اپنی رائے ایک دوسرے کے سامنے رکھنے کا اچھا موقع ملے گا۔"

پی ایم مودی تین ممالک کے دورے پر روانہ، وائٹ ہاؤس میں ٹرمپ کے ساتھ کریں گے ڈنر

مسٹر مودی نے پرتگال کے دورے کا بھی ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس دورے کے دوران پرتگال کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو آگے بڑھانے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ "پرتگال کے ساتھ ہمارے تاریخی اور دوستانہ تعلقات رہے ہیں اور اس سال جنوری میں وہاں کے وزیر اعظم کے دورہ ہند کے دوران انہیں مزید رفتار ملی ہے۔ پرتگال کے دورے کے دوران وہ مسٹر کوسٹا کے ساتھ مختلف شعبوں میں مشترکہ اقدامات کے بارے میں پیش رفت کا جائزہ لیں گے۔ اس کے ساتھ ہی اقتصادی تعاون، سائنس اور ٹیکنالوجی اور خلائی شعبے میں تعاون بڑھانے پر بھی گفتگو کریں گے۔

مسٹر مودی نے کہا کہ وہ 27 جون کو ہالینڈ میں رہیں گے۔ دونوں ممالک سفارتی تعلقات کے 70 سال مکمل ہونے کا جشن منا رہے ہیں۔ وہاں وہ وزیر اعظم مارک روٹ اور شاہ ولیم الیگزینڈر کے ساتھ ملاقات کریں گے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ"ہالینڈ یورپی یونین میں ہمارا چھٹا سب سے بڑا تجارتی پارٹنر ہے"۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز