وزریر اعظم مودی نے کہا : سوئس بینکوں میں ہندوستانیوں کے کالے دھن میں 45 فیصد کمی آئی

Jul 01, 2017 07:39 PM IST | Updated on: Jul 01, 2017 07:48 PM IST

نئی دہلی : ہفتہ کو وزیر اعظم مودی نے دہلی کے اندرا گاندھی اسٹیڈیم میں کہا کہ آج سے گڈ اینڈ سمپل ٹیکس کا آغاز ہو رہا ہے۔ آج ملک کے لئے تاریخی دن ہے۔ انہوں نے انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اكاونٹنٹس آف انڈیا کے پروگرام میں یہ بات کہی۔ پروگرام میں وزیر خزانہ ارون جیٹلی سمیت کئی مرکزی وزیر موجود رہے۔

انہوں نے کہا کہ سی اے پر معاشرے کی اقتصادی صحت کی ذمہ داری ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں ہندوستان کے چارٹرڈ اکاؤنٹینٹ کو فائنانشیل اسکلز کے لئے جانا جاتا ہے۔وزیر اعظم مودی نے کہا کہ کوئی بھی ملک بڑے سے بڑے بحران سے خود کو بچاؤ سکتا ہے، لیکن اگر اس ملک میں کچھ لوگوں کو چوری کرنے کی عادت لگ جائے تو وہ ملک اٹھ کھڑا نہیں ہو سکتا۔

وزریر اعظم مودی نے کہا : سوئس بینکوں میں ہندوستانیوں کے کالے دھن میں 45 فیصد کمی آئی

انہو ںنے کہا کہ سوئس بینکوں میں ہندوستان کی طرف سے جمع رقم اب تک کے سب سے نچلے سطح پر پہنچ گئی ہے۔ 30 سال پہلے سوئس بینکوں نے بتانا شروع کیا تھا۔ ہندوستانیوں کا جو پیسہ وہاں جمع ہے ، اس میں 45 فیصد کی کمی آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2014 سے ہی زوال کا دور شروع ہوگیاتھا، وہ اور تیز ہو گیا ہے۔ 2013 سوئس بینکوں کی رپورٹ کہتی ہے کہ اس میں 42 فیصد کا اضافہ ہوا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز