ہریانہ : 16 سالہ مسلم نوجوان حافظ جنید خان کے قتل کے الزام میں چار افراد گرفتار

Jun 28, 2017 08:46 PM IST | Updated on: Jun 28, 2017 08:46 PM IST

فرید آباد : ہریانہ کے پلول میں 16 سالہ مسلم نوجوان حافظ جنید خان کے قتل کے معاملہ میں پولیس نے چار ملزموں کو گرفتار کیا ہے۔ ہریانہ جی آر پی کے ایس پی كمل ديپ نے بتایا کہ چار ملزموں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ان میں سے ایک دہلی حکومت میں ملازم ہے۔ چاقو سے حملہ کرنے والے کے بارے میں بھی سراغ مل گیا ہے۔ ریلوے پولیس نے اس سے پہلے 10 مشتبہ افراد کو حراست میں لیا تھا ۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتہ جمعرات کو فرید آباد کے اساوتي ریلوے اسٹیشن پر عید کی خریداری کر کے واپس آ رہے جنید کا چاقو مارکر قتل کر دیا گیا تھا۔ جی آر پی نے اس معاملہ میں ملزموں کے بارے میں معلومات دینے پر ایک لاکھ روپے کا انعام دینے کا بھی اعلان کیا بھی کی تھی۔

ہریانہ : 16 سالہ مسلم نوجوان حافظ جنید خان کے قتل کے الزام میں چار افراد گرفتار

حافظ جنید اس کے بھائی ہاشم سمیت چار لڑکے جمعرات کی شام دہلی سے عید کی خریداری کر کے گاؤں واپس لوٹ رہے تھے۔ روزہ افطار سے پہلے تقریبا چھ بجے کا وقت تھا، تغلق آباد کے بعد کچھ اور لوگ ٹرین میں چڑھے،آتے ہی انہوں نے سیٹ کیلئے داداگیری دکھانی شروع کردی ، تاہم بھیڑ ہونے کی وجہ سے ان نوجوانوں نے سیٹ دینے سے منع کردیا ، جس کے بعد کہا سنی ہوگئی اور دیکھتے ہی دیکھتے بات مارپیٹ تک پہنچ گئی۔

ان لوگوں نے جنید پر مذہبی تبصرہ بھی کئے اور ان کو بیف کھانے والا بھی کہا۔ اساوتي اسٹیشن کے قریب بھیڑ نے ایک ساتھ چاروں نوجوانوں پر حملہ کر دیا۔ جنید کو چار اور ہاشم کو پانچ جگہ پر چاقو سے وار کئے گئے ہیں۔ اسپتال پہنچنے سے قبل ہی جنید نے دم توڑ دیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز