پروفیسر (حکیم) سعد عثمانی ’طبّی کانگریس‘ کے قومی کارگزار صدر مقرر

Jun 24, 2017 04:10 PM IST | Updated on: Jun 24, 2017 04:10 PM IST

نئی دہلی۔ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی گورننگ باڈی نے پروفیسر (حکیم) سعد عثمانی کو آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کا نیشنل کارگزار صدر مقرر کیا ہے۔ پروفیسر عثمانی اسٹیٹ یونانی میڈیکل کالج الٰہ آباد کے پرنسپل ہونے کے ساتھ ساتھ مرکزی اور صوبائی حکومت اترپردیش میں کئی اہم عہدوں پر فائز بھی ہیں۔ وہ ماہر فن طب یونانی کے علاوہ عربی و فارسی زبانوں کے ساتھ اردو، ہندی اور انگریزی زبانوں میں بھی مہارت رکھتے ہیں۔ وہ بین الاقوامی روٹری کلب الٰہ آباد شاخ کے صدر بھی ہیں۔

آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کے سکریٹری جنرل ڈاکٹر سیّد احمد خاں نے یواین آئی کو بتایا کہ پروفیسر سعد عثمانی خاندانِ عثمانی الٰہ آباد کے روشن چراغ ہیں اور وہ یونانی طبیبوں کے لیے قابلِ رشک ہیں۔ انہوں نے اپنے خاندان کی وراثت کو نہ صرف محفوظ رکھا بلکہ اسے آگے بھی بڑھایا۔ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی گورننگ باڈی کے فیصلے میں طبّی کانگریس راجستھان کے صدر پروفیسر (حکیم) غلام قطب چشتی کو ترقی دے کر قومی نائب صدر نامزد کیا گیا جبکہ ان کی جگہ پروفیسر (حکیم) سیّد محمد شفیق نقوی کو طبّی کانگریس راجستھان کا صوبائی صدر نامزد کیا گیا۔ اسی طرح طبّی کانگریس مہاراشٹر کے صدر ڈاکٹر ایس ایم حسین کو ترقی دے کر قومی نائب صدر کے طور پر ترقی دی گئی اور ان کی جگہ پروفیسر (حکیم) خان محمد قیصر خان کو طبّی کانگریس صوبہ مہاراشٹر کا صدر نامزد کیا گیا۔ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی گورننگ باڈی میں یہ بھی طے ہوا کہ وزارتِ آیوش میں مبینہ طورپر بدنظمی اور طب یونانی کے ساتھ امتیازی رویہ کے خلاف آئندہ ماہ 6 اگست کو دہرہ دون (اتراکھنڈ) میں طبّی کانگریس کے خصوصی اجلاس میں غور و خوض کیا جائے گا۔

پروفیسر (حکیم) سعد عثمانی ’طبّی کانگریس‘ کے قومی کارگزار صدر مقرر

آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کے سکریٹری جنرل ڈاکٹر سیّد احمد خاں: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز