روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف دہلی میں میانمار سفارت خانہ کے باہر زبردست احتجاج

Sep 13, 2017 06:57 PM IST | Updated on: Sep 13, 2017 07:07 PM IST

نئی دہلی : میانمار میں روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام خلاف ملک بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے ۔ نئی دہلی میں میانمار سفارت خانہ کے باہر مختلف سماجی و ملی تنظیموں سے وابستہ ہزاروں افراد نے شدید احتجاج کیا اور قتل عام کو فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا۔ لوگ اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھائے ہوئے تھے ، جس میں لکھا تھا آنگ سانگ سوچی ہوش میں آو ، روہنگیا مسلمانوں کا قتل بند کرو۔

مظاہرین نے روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے میانمار کی حکومت کےخلاف جم کر نعرے بازی کی ۔ مظاہرہ میں نوجوانوں کے علاوہ بڑی تعداد میں خواتین ، بوڑھے اور بچوں نے بھی شرکت کی۔

مظاہرین سے جن اہم شخصیات نے خطاب کیا ، ان میں دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر منوج جھا ، آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے صدر نوید حامد ، جماعت اسلامی ہند کے جنرل سکریٹری انجینئر محمد سلیم ، پروفیسر اپروانند ، نصرت علی اور جے این یو کی طالبہ شہلا رشید شامل ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز