کار پر ہوئے حملہ پر راہل گاندھی بولے: یہ مودی، بی جے پی اور آر ایس ایس کی سیاست کا طریقہ

راہل نے ہفتہ کو کہا کہ کل کے واقعہ میں اتنا بڑا پتھر بی جے پی کے کارکن نے میری طرف مارا۔

Aug 05, 2017 12:27 PM IST | Updated on: Aug 05, 2017 12:27 PM IST

نئی دہلی۔ گجرات میں کانگریس نائب صدر راہل گاندھی کی گاڑی پر جمعہ کو حملہ ہوا ہے۔ بناس كانٹھا جاتے وقت کچھ لوگوں نے ان کی گاڑی پر پتھر پھینکے۔ اس سے ان کی گاڑی کے شیشے ٹوٹ گئے۔ کانگریس نائب صدر کو کالے جھنڈے بھی دکھائے گئے ہیں۔ اس کے بعد راہل نے ہفتہ کو کہا کہ کل کے واقعہ میں اتنا بڑا پتھر بی جے پی کے کارکن نے میری طرف مارا۔ میرے پی ایس او کو چوٹ لگی۔ یہ مودی، بی جے پی اور آر ایس ایس کی سیاست کا طریقہ ہے۔ کیا کہہ سکتے ہیں؟ جو اس طرح کام کرتا ہے، وہ کیسے اس کی تنقید کر سکتا ہے۔

بتا دیں کہ ایک دن پہلے سیلاب زدہ علاقوں کے دورے کے دوران لوگوں سے خطاب کرتے ہوئے راہل نے کہا کہ دو چار کالے جھنڈوں سے وہ ڈرنے والے نہیں ہیں۔ آنے دو، آنے دو، یہ کالے جھنڈے یہاں لگانے دو ... کوئی فرق نہیں پڑتا ہمیں ... کوئی فرق نہیں پڑتا ہمیں... ڈرے ہوئے ہیں یہ لوگ .... کوئی فرق نہیں پڑتا ہمیں۔

کار پر ہوئے حملہ پر راہل گاندھی بولے: یہ مودی، بی جے پی اور آر ایس ایس کی سیاست کا طریقہ

راہل گاندھی، گیٹی امیجیز: فائل فوٹو

کانگریس نے اس واقعہ کے لئے بی جے پی کو ذمہ دار بتایا ہے۔ کانگریس لیڈر ابھیشیک منو سنگھوی نے اس واقعہ پر کہا کہ کچھ دیر پہلے راہل گاندھی پر بی جے پی کے غنڈوں نے سیمنٹ کی اینٹوں سے حملہ کیا۔ ایس پی جی کے لوگوں کو چوٹ پہنچی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز