وادی کشمیر میں ریل خدمات ایک بار پھر معطل ، مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا

Jun 28, 2017 05:41 PM IST | Updated on: Jun 28, 2017 05:41 PM IST

سری نگر: جموں خطہ کے بانہال اور شمالی کشمیر کے بارہمولہ کے درمیان چلنے والی ریل خدمات کو ایک بار پھر معطل کردیا گیا ہے۔ ریل خدمات کو عیدالفطر کے پیش نظر ایک دن کے لئے معطل رکھنے کے بعد منگل کو ہی بحال کیا گیا تھا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ خدمات کو ایک بار پھر معطل رکھنے کا فیصلہ احتیاطی اقدامات کے طور پر لیا گیا ہے، کیونکہ بقول ان کے کچھ شرپسندوں نے منگل کے روز ریلوے املاک کو نقصان پہنچایا ہے۔

ریلوے کے ایک عہدیدار نے یو این آئی کو بتایا ’ہم نے ریل خدمات کو احتیاطی اقدامات کے طور پر معطل رکھا ہے‘۔ انہوں نے بتایا ’ریل خدمات کو معطل رکھنے کا فیصلہ کچھ شرپسندوں کی جانب سے ریلوے املاک کو نقصان پہنچائے جانے کے پیش نظر لیا گیا ہے‘۔

وادی کشمیر میں ریل خدمات ایک بار پھر معطل ، مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا

file photo

دریں اثنا ریل خدمات کی معطلی کے سبب ہزاروں مسافروں کو بدھ کے روز شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ مختلف سرکاری و نجی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین نے بتایا کہ ریل خدمات کی معطلی کے سبب وہ وقت پر اپنے دفاتر کو نہیں پہنچ پائے۔ ریل گاڑیوں کے ذریعے سفر کرنے والے طلباء کی بھی یہی شکایت تھی۔ جموں جانے والے مسافروں نے بتایا کہ انہیں ریل خدمات کی معطلی کی وجہ سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

وادی میں ریل خدمات کو رواں ماہ کم از کم چار مرتبہ مختلف وجوہات بالخصوص سیکورٹی وجوہات کی بناء پر احتیاطی اقدامات کے طور پر معطل رکھا گیا۔ ریلوے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ماضی میں بھی تشدد کے واقعات کے دوران وادی میں ریلوے املاک کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچایا گیا ۔ وادی میں گذشتہ برس جولائی میں معروف حزب المجاہدین کمانڈر برہان مظفر وانی کی ہلاکت کے بعد احتجاجی مظاہروں کے سبب ریل خدمات کم از کم چار ماہ تک معطل رہی تھیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز