اتکل ایکسرپس حادثہ : ریلوے نے اپنی غلطی کا کیا اعتراف ، آج شام تک طے ہوگا قصوروار کون ؟

ریلوے بورڈ کے ممبر محمد جمشید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات کا اعتراف کیا کہ ابتدائی تحقیقات میں ریلوے کی ہی غلطی سامنے آ رہی ہے۔

Aug 20, 2017 02:42 PM IST | Updated on: Aug 20, 2017 02:42 PM IST

مظفرنگر : مظفرنگر کے نزدیک کھتولی میں ہفتہ کو ہوئے اتكل ایکسپریس حادثے کے سلسلہ میں ریلوے بورڈ کے ممبر محمد جمشید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات کا اعتراف کیا کہ ابتدائی تحقیقات میں ریلوے کی ہی غلطی سامنے آ رہی ہے۔ انہوں نے کہا آج شام تک متعلقہ زونل ہیڈ سے اس بارے میں ابتدائی رپورٹ طلب کی گئی ہے تاکہ ابتدائی طور پرقصورواروں کے خلاف کارروائی کی جاسکے۔

ساتھ ہی ساتھ ریلوے نے آج جاری کئے اپنے اعداد و شمار میں واضح کیا کہ اتكل ایکسپریس ریل حادثے میں کل 20 افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ 92 زخمی ہوئےہیں۔ مکمل جانچ کی ذمہ داری وزارت ریل نے کمشنر ریلوے سیفٹی کو سونپ دی ہے۔ اس حادثے کی تکنیکی، انسانی اور بیرونی پہلوؤں کی بھی اچھی طرح سے جانچ کی جائے گی اور اس بات کا بھی پتہ لگایا جائے گا کہ اس حادثے کے لئے اصل قصوروار کون ہے۔

اتکل ایکسرپس حادثہ : ریلوے نے اپنی غلطی کا کیا اعتراف ، آج شام تک طے ہوگا قصوروار کون ؟

علاوہ ازیں ریلوے بورڈ کے رکن محمد جمشید نے بھی بتایا کہ مقامی پولیس نے غیر ارادتا قتل سمیت کئی دفعات کے تحت نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ یعنی قصوروار پایاجانے والے افراد کے خلاف انہیں دفعات کے تحت کارروائی کی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ جائے حادثے سے 8 بجے رات تک سبھی متاثرہ ڈبوں کو ہٹا لیا جائے گا اور اس کے بعد پٹریوں کی مرمت کا کام شروع کیا جائے گا۔ رات میں تقریبا 10 بجے سے ریلوے کی خدمات بحال ہوجائیں گی

ادھر حادثہ کے بعد اتر پردیش کے ایک سینئر افسر نے معلومات دی کہ اتكل ایکسپریس کے پٹری سے اترنے سے 156 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ تمام زخمیوں کی فہرست یوگی حکومت کے پرنسپل سکریٹری (انفارمیشن) اونیش کمار اوستھی نے سونپ دی ہے۔ زخمی مسافروں کو میرٹھ اور مظفر نگر میں کئی اسپتالوں میں داخل کرادیا گیا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز