پانچ دن میں 2 بڑے ٹرین حادثات کے بعد ریلوے بورڈ کے چیئرمین نے استعفی دیا

Aug 23, 2017 01:48 PM IST | Updated on: Aug 23, 2017 01:49 PM IST

نئی دہلی۔ ریلوے بورڈ کے چیئرمین اشوک متل نے ریلوے کے وزیر سریش پربھو کو اپنا استعفی سونپ دیا ہے۔ لیکن ابھی یہ صاف نہیں ہوا ہے کہ ان کا استعفی قبول ہوا ہے یا نہیں۔ متل نے اپنے استعفی میں ذاتی وجوہات کا ذکر کرتے ہوئے عہدے سے ہٹنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ حالانکہ مانا جا رہا ہے کہ شمالی ریلوے میں گزشتہ پانچ دنوں میں ہوئے دو بڑے ریلوے واقعات کی وجہ سے انہوں نے استعفی دیا ہے۔

بتا دیں کہ گزشتہ ہفتہ کو مظفر نگر کے کھتولی میں اتکل ایکسپریس پٹری سے اتر گئی تھی۔ اس حادثے میں 22 مسافر ہلاک اور بہت سے زخمی ہوگئے۔ ریلوے ٹریک میں کریک  کی وجہ سے یہ حادثہ رونما ہوا تھا۔ وہیں، بدھ کو اعظم گڑھ سے دہلی آنے والی کیفیات ایکسپریس حادثے کا شکار ہو گئی۔ اس حادثے میں 78 مسافر زخمی ہوئے ہیں۔

پانچ دن میں 2 بڑے ٹرین حادثات کے بعد ریلوے بورڈ کے چیئرمین نے استعفی دیا

ریل وزیر سریش پربھو کے ساتھ اشوک متل۔ تصویر، پی ٹی آئی۔

اشوک متل گزشتہ تین سالوں سے  ریلوے بورڈ کے چیئرمین ہیں، گزشتہ سال ہی ان کی میعاد کار دو سال کے لئے بڑھا دی گئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز