فلائٹ کی طرح اب ٹرینوں میں بھی ہوگی اکنامی کلاس ، جانیں کتنا ہوگا کرایہ

Jul 02, 2017 02:51 PM IST | Updated on: Jul 02, 2017 02:51 PM IST

نئی دہلی : طیارہ کی طرح ہی جلد ہی ٹرینوں میں بھی اکنامی کلاس شروع ہونے جا رہی ہے۔ دراصل ہندوستانی ریلوے زیادہ سے زیادہ لوگوں کو سلیپر کی بجائے اے سی کا سفر کروانا چاہتی ہے، اس سے ریلوے کی کمائی بھی بڑھ جائے گی اور لوگوں کو کم پیسے میں اے سی کلاس میں سفر کرنے کو بھی مل جائے گا۔

بتایا جا رہا ہے کہ اکنامی اے سی کلاس کا کرایہ تھری اے سی سے کم ہوگا ۔ آنے والے دنوں میں شروع ہونے والی پہلی اے سی ٹرینوں میں اے سی تھری ، اے سی 2 اور اے سی 1 کے علاوہ اب تھری ٹائر اکنامی اے سی کوچ کے بھی لگائے جائیں گے۔

فلائٹ کی طرح اب ٹرینوں میں بھی ہوگی اکنامی کلاس ، جانیں کتنا ہوگا کرایہ

کہا جا رہا ہے کہ اس بوگی میں مسافروں کو کمبل کی ضرورت نہیں پڑے گی ،کیونکہ اس میں درجہ حرارت 24-25 ڈگری کے ارد گرد رہے گا۔ریلوے کی وزارت کے ایک سینئر افسر نے کہا کہ دیگر اے سی کٹیگریوں کے مقابلہ میں اس میں کولنگ کم ہوگی اور درجہ حرارت 24-25 ڈگری پر رہے گا۔ اس کا مقصد مسافروں کو آرام پہنچانا اور باہر کی گرمی سے محفوظ رکھنا ہے۔

فی الحال مختلف روٹوں پر چلنے والی ٹرینوں میں سلیپر، تھرڈ اے سی، سیکنڈ اے سی اور فرسٹ اے سی کی بوگیاں ہوتی ہیں۔ وہیں راجدھانی اور شتابدی جیسی ٹرینیں مکمل طور پر اے سی ٹرینیں ہیں ، جن میں تین کٹیگری ہوتی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز