راہل کے وزیراعظم بننے پر 18فیصد سے زیادہ جی ایس ٹی نہیں لگے گا: راج ببر

Oct 12, 2017 11:02 AM IST | Updated on: Oct 12, 2017 11:02 AM IST

بریلی۔ اترپردیش کانگریس کے صدر راج ببر نے کہا کہ راہل گاندھی کے وزیراعظم بننے پر اشیا اور خدمات ٹیکس (جی ایس ٹی ) کا پھر سے جائزہ لیا جائے گا اور 18فیصد سے زیادہ جی ایس ٹی نہیں لگے گا۔ مسٹر ببر کل یہاں اندراگاندھی پیدائش صدی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے پارٹی کارکنوں سے کہا کہ وہ اپنی طاقت پہچانیں اور گمراہ کرنے والے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈروں سے مقابلہ کے لئے تیار ہوں۔ انہوں نے پارٹی کارکنوں کو کانگریس کے سینئر لیڈروں کی قربانیاں یاد دلاتے ہوئے دعوی کیا کہ مسٹر گاندھی کے وزیراعظم بننے پر جی ایس ٹی کا پھر سے جائزہ لیا جائے گا۔ یہ جائزہ نوجوانوں، چھوٹے کاروباریوں اور کسانوں کے مفادات کو پیش نظر رکھ کر لیا جائے گا۔ کسی بھی قیمت پر جی ایس ٹی 18فیصد سے زیادہ نہیں ہوگا۔

پارٹی کے اندر گروپ بندی کا ذکرکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اندرا گاندھی، راجیو گاندھی اور سونیا گاندھی کے عزائم کو سمجھیں۔ پارٹی کارکن صرف لفاظی کی پارٹی بی جے پی کو زمین دوز کرنے کی سوچیں تاکہ ملک کو صحیح سمت میں لے جایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور سنگھ نوجوانوں کو قوم پرستی کے نام پر زہر پلا کر گمراہ کرر ہی ہیں۔ پارٹی کے لوگوں کو چاہئے کہ وہ قوم پرستی کا زہر پلانے والوں کو بے نقاب کریں۔

راہل کے وزیراعظم بننے پر 18فیصد سے زیادہ جی ایس ٹی نہیں لگے گا: راج ببر

سینئر کانگریس لیڈر اور یوپی کانگریس کمیٹی کے صدر راج ببر: فائل فوٹو۔

وزیراعظم کے بیٹی بچاو نعرہ کا ذکر کرتے ہوئے مسٹرببر نے کہا کہ بی جے پی حکومت بیٹی بچانے کی آڑ میں ایک بیٹے کو بڑھاوا دے رہی ہے۔ مسٹر گاندھی کے وزیراعظم بننے پر مودی حکومت کے کالے چٹھے کھولے جائیں گے۔ اس موقع پر کانگریس کے جنرل سکریٹری نے سنجے سنگھ نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ راہل گاندھی امیٹھی میں 16000کروڑ کے منصوبے لائے تھے ۔ ان منصوبوں کو مودی۔یوگی حکومت نے یا تو بند کردیا ہے یا دوسری جگہ منتقل کردیا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز